میڈیا کوریج،سینیٹ اور قومی اسمبلی اجلاس کے مشترکہ ایس او پی جاری

میڈیا کوریج،سینیٹ اور قومی اسمبلی اجلاس کے مشترکہ ایس او پی جاری

  

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر)سینیٹ اور قومی اسمبلی کے اجلاس کے ایس او پی مشترکہ طور پر جاری کر دیئے گئے، قومی اسمبلی، سینٹ،پی آر اے اور وزارت اطلاعات نے متفقہ طورپر جاری کئے جس کے مطابق سینٹ و قومی اسمبلی اور بجٹ اجلاس کے لئے ہر ادارے سے قومی اسمبلی کے لئے تین جبکہ سینٹ کے لئے دو کارڈز جاری ہوں گے۔،ایک وقت میں ایک ایک رپورٹر قومی اسمبلی اور سینٹ کور کرسکے گا،ایک روز میں ایک ادارے کے دورپورٹرز ایک دوسرے کے متبادل فرائض سرانجام دے سکیں گے،تیسرا رپورٹر رکھنے کا مقصد متبادل رپورٹر بیک اپ پہ رکھنا ہے،تمام رپورٹرز ماسک استعمال کریں گے صابن سے بار بار ہاتھ دھوئیں گے اور سماجی فاصلہ برقرار رکھیں گے،ہاتھ ملانے،گلے ملنے،ایک دوسرے کے استعمال شدہ سامان مثلاً گلاس وغیرہ کو استعمال کرنے سے گریز کیا جائے گا،پی آئی ڈی تمام اداروں سے نام لے گی جو ادارہ جن جن رپورٹرز کے نام دے گا دینے والے ذمہ دار کا نام تحریری طورپر ریکارڈ میں رکھا جائے گا تاکہ بعد میں کوئی اعتراض نہ اٹھے،پارلیمنٹ کے گیٹ نمبر ایک کے باہر میڈیا کوریج نہیں ہوگی۔ پارلیمنٹ کے اندر کسی بھی جگہ پر موبائل ساٹس لینے سے گریز کیا جائے گا البتہ کوئی رہنما بات کرنا چاہتا ہے تو سماجی فاصلے کا خیال رکھتے ہوئے ایک دو رپورٹرز ساٹس لیکر پی آر اے آفیشل سمیت پارلیمانی گروپس میں شیئر کردیں گے،بجٹ دستاویزات و تقریر کی ہارڈ و سافٹ کاپیاں بروقت فراہم کی جائیں گی۔ کسی ایک ادارے (ٹی وی،اخبار اور نیوز ایجنسی)کابجٹ کے روز کوریج کرنے والی رپورٹنگ ٹیم میں سے کوئی ایک رپورٹر بجٹ دستاویز کی ایک کاپی گیٹ نمبر پانچ سے حاصل کرسکے گا،کرونا ٹیسٹ صرف علامات والے یا جن کے پچھلے سیشن میں ٹیسٹ نہیں ہوئے ان کے ہوں گے،غیر ملکی میڈیا ای پی ونگ کے ذریعے ہی پارلیمنٹ آسکے گا،رپورٹرز کو چار جون سہہ پہر تک پی آئی ڈی کارڈز لازمی جاری کردے گی۔

ایس او پی

مزید :

صفحہ اول -