پنجاب میں گھر سے باہر ماسک پہن کر نکلنے کے حکم نامے پر آج سے عملدرآمد شروع

پنجاب میں گھر سے باہر ماسک پہن کر نکلنے کے حکم نامے پر آج سے عملدرآمد شروع

  

ٍٍ لاہور(لیاقت کھرل)وفاقی محکموں سمیت سرکاری و نجی اداروں،پنجاب اسمبلی،ہسپتالوں، مارکیٹوں،بازاروں،شاپنگ مالز،عوامی مقامات،شادی ہالزاور صنعتوں میں آج سے ماسک پہننا لازمی قرار دے دیا گیا۔ماسک کے بغیردفاتر میں افسروں،ملازمین اور سائلین کے داخلے پر مکمل طور پر پابندی عائد کر دی گئی، وزیر اعلی پنجاب عثمان بزدار کے حکم پر اس پر مکمل طور پر عمل درآمد کرنے کیلئے کریک ڈاؤن شروع کیا جائے گا، جس کیلئے ضلعی انتظامیہ پولیس اور ٹائیگر فورس کو ذمہ داری سونپ دی گئی۔ایڈیشنل چیف سیکرٹری پنجاب مومن علی آغا کے مطابق سرکاری حکم نامے کی خلاف ورزی پر سزا و جزا کا عمل شروع کر دیا گیا، پہلے مرحلہ میں وارننگ اور نوٹس جاری ہوں گے۔دوسرے مرحلہ میں ماسک نہ پہننے پر جرمانے اور مقدمات درج ہوں گے۔دوسری جانب نیب لاہور اور ایف آئی اے کے زونل دفتر سمیت سوئی گیس کمپنی ہیڈافس۔گلبرگ ریجنل آفس سمیت سوشل سکیورٹی ڈیپارٹمنٹ میں این ڈی ایم اے کی ٹیموں نے افسروں اور اہلکاروں سمیت نیب لاہور کے زیر حراست ملزموں کے بھی سیمپل لیے۔سوشل سکیورٹی ہسپتال کوٹ لکھپت کے ایم ایس سمیت 20 افسروں اور اہلکاروں میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوگئی،علاوہ ازیں محکمہ پولیس کے اہم دفاتر میں عوام الناس کا داخلہ بند کر دیا گیاجبکہ ایڈیشنل آئی جی انعام غنی نے روز نامہ پاکستان کو بتایا کہ ڈی آئی جی آپریشن پنجاب سہیل اختر سکھیرا،ایس ایس پی آپریشن لاہور فیصل شہزاد سمیت ایس پی سکیورٹی لاہور بلال ظفر شیخ۔ خاتون ایس پی ماریہ بی بی،ڈی ایس پی سمن آباد لاہور وحید اسحاق کی صحت میں بھی پہلے سے بہتری آرہی ہے۔

عملدرآمد شروع

مزید :

صفحہ اول -