دوحہ میں طالبان قیادت کورونا کا شکار، ملا ہیبت اللہ آخوند زادہ ہلاک

    دوحہ میں طالبان قیادت کورونا کا شکار، ملا ہیبت اللہ آخوند زادہ ہلاک

  

واشنگٹن(آئی این پی)طالبان کے سرغنہ ملا ہیبت اللہ آخوندزادہ کے کورونا وائرس سے ہلاک ہونے سے متعلق متضاد خبریں گردش کر رہی ہیں، امریکی میگزین نے دعویٰ کیا ہے کہ طالبان کے سربراہ ملا ہیبت اللہ آخوندزادہ کورونا وائرس سے ہلاک ہوگئے ہیں، دوسری جانب طالبان رہنما مولوی احمد علی جان کا کہنا ہے طالبان سربراہ کورونا میں مبتلا ہوئے ہیں، تاہم وہ صحت یاب ہورہے ہیں جبکہ ایک سینئر افغان اہلکار کا کہنا ہے امن معاہدے پر دستخط کرنیوالے طالبان کے کئی سینئر ارکان بھی کورونا میں مبتلا ہوچکے ہیں۔ بین الاقوامی میڈیا نے ایک امریکی میگزین کے حوالے سے کہا ہے طالبان کے سربراہ ملا ہیبت اللہ آخوندزادہ کورونا وائرس سے ہلاک ہوگئے ہیں۔امریکی میگزین نے طالبان کے ایک رہنما مولوی احمد علی جان کے حوالے سے کہا ہے کہ طالبان سربراہ کورونا میں مبتلا ہوئے ہیں تاہم وہ صحت یاب ہورہے ہیں، تاہم امریکی رسالے نے کوئٹہ میں طالبان کے تین رہنماؤں کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ ملا ہیبت اللہ آخوندزادہ کورونا وائرس سے ہلاک ہوگئے ہیں۔ البتہ ابھی تک آزاد ذرائع نے اس خبر کی تردید یا تائید نہیں کی اور طالبان کی جانب سے بھی باقاعدہ طور پر اس حوالے سے کوئی بیان سامنے نہیں آیا۔افغان حکومت کے ایک سینئر اہلکار نے بتایا ہے کہ قطر کے دارالحکومت دوحہ میں امریکہ کیساتھ امن معاہدے پر دستخط کرنیوالے طالبان کے کئی سینئر ارکان بھی کورونا میں مبتلا ہوچکے ہیں۔افغان حکومت کے اہلکار نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر کہا ہے کہ دوحہ میں موجود طالبان کی پوری قیادت کورونا وائرس میں مبتلا ہوچکی ہے۔

طالبان کورونا

مزید :

علاقائی -