پشاور،ڈینٹل ڈاکٹرز کا صوبے میں ایک ہزار آسامیوں کا مطالبہ

  پشاور،ڈینٹل ڈاکٹرز کا صوبے میں ایک ہزار آسامیوں کا مطالبہ

  

پشاور(سٹی رپورٹر)خیبر پختونخوا کے ڈینٹل ڈاکٹرز نے صوبائی حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ صوبہ میں ڈینٹسٹ کیلئے 1000اسامیوں کا اعلان کیا جائے جبکہ پوسٹ اور پروموشن کے احکامات جاری کئے جائے اور عطائی ڈاکٹروں کے خلاف آپریشن سمیت ڈینٹس کو درپیش دیگر مسائل کیلئے سنجیدگی سے اقدامات اٹھائے جائیں کیونکہ موجودہ ھالات میں کورونا وباء کے باعث لاک ڈاون سے ڈینٹس سب سے زیادہ متاثر ہوئے ہے اور پچھلے 3ماہ سے کلینکس بند پڑے ہیں،پشاور پریس کلب میں ڈینٹل ڈاکٹر صالح نے دیگر ڈاکٹرز کے ہمرای پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ ملک بھر میں چالیس ہزار رجسٹرڈ ڈنتیسٹ ہے جو موجودہ لاک ڈاون میں سب سے زیادہ متاثر ہوئے ہیں کیونکہ تین ماہ سے کلینکس بند پڑے ہیں انہوں نے کہا کہ پاکستان میں 98فیصد مریض دانتوں کے مسائل کا شکار ہیں تاہم کلینکس بند ہونے سے داکٹرز اور مریضوں کو شدید مشکلات کا سامنا ہے۔انہوں نے کہا کہ ڈینٹس کیلئے کوئی اسامیاں نہین،سی پی ایس پی پاس کردہ ڈاکٹرز کو پوسٹ نہیں ملتی جبکہ باہر جانے کیلئے بھی ڈینٹس شدید مسائل کا شکار ہے اور ڈاکٹرز کی پروموشن نہ ہونے سے بھی نئے ڈاکٹرز کو مواقعے نہیں ملتے جبکہ رہی سہی کسء عطائی ڈاکٹروں نے پوری کی جو عوام کو دونوں ہاتھوں سے لوٹ رہے ہیں ڈینٹل ڈاکٹرز نے صوبائی حکومت سے مطالبہ کیا کہ دینٹل ڈاکٹرز کیلئے 1000اسامیوں کا اعلان کریں،ڈاکٹرز کو باہر جانے کیلئے فیسیلیٹی دینے سمیت ڈاکٹر ز کو پوسٹ اورپروموشن کے احکامات جاری کریں تاکہ نئے ڈاکٹرز کو کو موقع ملے اور عطائی ڈاکٹروں کے خلاف آپریشن کریں.

مزید :

پشاورصفحہ آخر -