وفاقی حکومت مزدوروں کیخلاف سازشیں بند کرے: بلاول بھٹو زرداری 

وفاقی حکومت مزدوروں کیخلاف سازشیں بند کرے: بلاول بھٹو زرداری 

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر) پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے اپنے ایک اہم بیان میں وفاقی حکومت کوتنبیہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ وفاقی حکومت ریاست کے ماتحت اداروں کے مزدوروں کے خلاف سازشیں بند کرے۔ سرکاری، نیم سرکاری یا ریاستی کارپوریشنز کے ملازمین کو اگر نوکریوں سے نکالا گیا تو بھرپور مزاحمت کریں گے۔ عمران خان اور ان کی کابینہ کے کچھ ارکان افراتفری کی ایسی صورت حال پیدا کرنا چاہتے ہیں تاکہ ریاستی کارپوریشنز ان کے منظورنظر افراد کی نذر ہوجائیں۔ بلاول بھٹو نے کہا کہ قومی ائیرلائن اور پاکستان اسٹیل ملز وہ قومی اثاثے ہیں جو پہلے دن سے پی ٹی آئی حکومت کے نشانے پر ہیں۔پی ٹی آئی منظم طریقے سے ریاستی کارپوریشنز کے ہزاروں ملازمین اور ان کے خاندان کے لاکھوں افراد کے روزگار سے کھیل رہی ہے۔ پی آئی اے میں لازمی سروس ایکٹ کا نفاذ اور یونین پر پابندی ایک غیرآئینی عمل ہے۔ انہوں نے کہا کہ ورکرز کو بنیادی حقوق سے محروم کرنے کے حکومتی اقدامات اس راز کو بھی فاش کررہے ہیں کہ حکومت ادارے فروخت کرنا چاہتی ہے۔ عمران خان نے اسٹیل ملز کے دروازے پر کھڑے ہوکر کہا تھا کہ ان کے پاس ماہرین ہیں جو ادارے کو اپنے پاؤں پر کھڑا کرسکتے ہیں۔عمران خان اپنا وعدہ بھول کر اب ان افراد کے مقاصد کی تکمیل میں لگ گئے ہیں جو ریاستی اداروں کو اپنے منظورنظر افراد کو فروخت کرنا چاہتے ہیں۔ بلاول بھٹو نے کہا کہ عمران خان کا ایک کروڑ نوکریاں دینے کا وعدہ دراصل ایک جھانسہ تھا جو غریبوں اور بیروزگاروں کو دیا گیا۔ پاکستان پیپلزپارٹی کسی سرکاری شعبے کی ڈاؤن سائزنگ نہیں ہونے دے گی۔ پاکستان پیپلزپارٹی بے روزگار کرنے اور نجکاری کے حکومتی اقدامات کے خلاف بھرپور مزاحمت کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کی جانب سے ذمہ داریوں سے فرار کے خلاف پی پی پی قوم کی رہنمائی کرے گی۔ کرونا وائرس کی وبا کے دنوں میں مزدوروں کو نوکریوں سے نکالنا سفاکیت ہے۔

 اسلام آباد (این این آئی)الیکشن کمیشن میں بلاول بھٹو زرداری کے اثاثوں میں تضاد سے متعلق کیس کی سماعت 10جون تک ملتوی کر دی گئی۔ بدھ کو الیکشن کمیشن ممبر پنجاب کی سربراہی میں 4 رکنی کمیشن نے کیس کی سماعت کی۔بلاول بھٹو زرداری کے وکلاء نے الیکشن کمیشن میں اثاثہ جات میں تضاد سے متعلق جواب جمع کرادیا۔ الیکشن کمیشن نے کہاکہ جمع کرائے گئے جواب کا جائزہ لیکر فیصلہ کرینگے۔ ممبر الیکشن کمیشن نے کہاکہ پولیٹیکل فنانس ونگ نے بھی معاملے پر ابتدائی رپورٹ جمع کرائی ہے،پولیٹیکل فنانس ونگ سے تفصیلی رپورٹ مانگی ہے۔آئندہ سماعت پر تفصیلی رپورٹ کا جائزہ لیں گے۔ بعد ازاں الیکشن کمیشن نے کیس کی سماعت 10 جون تک ملتوی کردی۔ یاد رہے کہ بلاول بھٹو زرداری کو اثاثہ جات میں تضاد پر نوٹس کیا گیا تھا،بلاول بھٹو زرداری نے وکلاء کے ذریعے جواب جمع کرایا۔

سماعت ملتوی 

مزید :

صفحہ اول -