کورونا کا پاکستان میں شروع ہونے والا پلازمہ تھراپی سے علاج نقصان دہ قرار، اس سے مریض کو کیا ہوسکتا ہے؟ ڈاکٹرز کا پریشان کن انکشاف

کورونا کا پاکستان میں شروع ہونے والا پلازمہ تھراپی سے علاج نقصان دہ قرار، اس ...
کورونا کا پاکستان میں شروع ہونے والا پلازمہ تھراپی سے علاج نقصان دہ قرار، اس سے مریض کو کیا ہوسکتا ہے؟ ڈاکٹرز کا پریشان کن انکشاف

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز کی جانب سے پلازمہ تھراپی کیلئے کورونا کے علاج کو نقصان دہ قرار دے دیا۔

یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز کی جانب سے کہا گیا ہے کہ پلازمہ تھراپی کے ذریعے کورونا کا علاج کرنے سے مریض کا دل بند ہونے کا خطرہ ہوتا ہے، یونیورسٹی کی جانب سے کورونا کے علاج کیلئے سینتھیٹک اینٹی  باڈیز تیار کرنا شروع کردی گئی ہیں۔

یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز  کے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر جاوید اکرم کا کہنا ہے کہ پلازمہ تھراپی کی وجہ سے مریضوں کو پیچیدگیاں ہوسکتی ہیں، اس سے مریض کا دل بند ہوسکتا ہے اس لیے  یونیورسٹی  نے پلازمہ سے اینٹی باڈیز الگ کرلی ہیں اور ہیومن ہائیبرڈروما ٹیکنیک کے ذریعے مصنوعی اینٹی باڈیز بنائی جا رہی ہیں، جس کے بعد کورونا کے علاج میں پلازما کی ضرورت ختم ہو جائے گی۔ انہوں نے بتایا کہ یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز سنتھیٹک اینٹی باڈیز تیار کرنے والی ایشیا کی پہلی یونیورسٹی ہے۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -کورونا وائرس -