گورنر پنجاب چوہدری سرور کو بڑا جھٹکا،صاف پانی کے منصوبوں بارے تشویش ناک خبر آ گئی

گورنر پنجاب چوہدری سرور کو بڑا جھٹکا،صاف پانی کے منصوبوں بارے تشویش ناک خبر ...
گورنر پنجاب چوہدری سرور کو بڑا جھٹکا،صاف پانی کے منصوبوں بارے تشویش ناک خبر آ گئی

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن) کورونا وائرس کی وباء سے پیدا ہونیوالے بحران نے صاف پانی کے منصوبوں کو بھی نگل لیا ،نئے مالی سال میں واٹر سپلائی اینڈ سینی ٹیشن کے لئے خطیر فنڈز مختص نہیں ہوں گے، پنجاب میں واٹر سپلائی اور سینی ٹیشن کے لئے نئے مالی سال میں 7 ارب 75 کروڑ روپے ہی مختص کرنے کی تجویز ہے۔

تفصیلات کےمطابق نئے مالی سال میں پنجاب حکومت کو بجٹ بنانے میں شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے، سابق دور حکومت میں جہاں صاف پانی کے منصوبوں پر اربوں روپے کا فنڈ مختص کیا جاتا رہا وہیں اب صاف پانی کی فراہمی کے لئے صرف 2 ارب روپے سے زائد کے فنڈز مختص کرنے کی تجویزہے۔ذرائع کے مطابق آب پاک اتھارٹی کے 8 ارب روپے کے میگا منصوبے پر بھی کم بجٹ مختص ہوگا، ذرائع نے بتایا ہے کہ پنجاب بھر میں واسا کو سالانہ دی جانیوالی سبسڈی کے لئے بھی بجٹ کم مختص ہوگا، مالی سال میں واسا، صاف پانی، سیوریج کے نکاس کے منصوبوں کے لئے بھی صرف 7 ارب 75 کروڑ روپے دیئے جائیں گے۔یاد رہے کہ پنجاب حکومت نے شہریوں کو صاف پانی کی فراہمی کے لیے آب پاک اتھارٹی قائم کی تھی جس کا چیئرمین اور پیٹرن انچیف گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور کو لگایا گیا تھا ،چوہدری محمد سرور ذاتی حیثیت میں بھی اپنی این جی او "سرور فاؤنڈیشن "کے تحت پنجاب بھرمیں صاف پانی کےپلانٹ لگانےکےلئےکافی متحرک ہیں اورہردوسرے روز پنجاب کےکسی ضلع میں سرور فاؤنڈیشن کے زیر اہتمام صاف پانی کے پلانٹ کا افتتاح کرتے دکھائی دیتے ہیں۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -