مالی سال 21۔2020، ٹیکس اہداف پر ایف بی آر کے وزارت خزانہ سے اختلافات

  مالی سال 21۔2020، ٹیکس اہداف پر ایف بی آر کے وزارت خزانہ سے اختلافات

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) مالی سال 2020-21کے ٹیکس اہداف پر فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) اور وزارت خزانہ میں اختلافات سامنے آ گئے۔ذرائع کے مطابق ایف بی آر کو آئندہ مالی سال کے لیے 4700ارب روپے کا ٹیکس ہدف تحریری طور پر دے دیا گیا ہے تاہم ایف بی آر نے 4700 ارب روپے کے ٹیکس ہدف کے حصول کو مشکل قرار دے دیا ہے۔ذرائع کا بتانا ہے کہ ایف بی آر آئندہ مالی سال کے دوران ٹیکس ہدف 4400 ارب روپے رکھنا چاہتا ہے۔ذرائع کے مطابق آئی ایم ایف اگلے مالی سال کیلئے5100 ارب روپے کا ٹیکس(بقیہ نمبر48صفحہ6پر)

ٹارگٹ مقرر کرنا چاہتا ہے۔ایف بی آر حکام کا کہنا ہے کہ آئندہ مالی سال کی پہلی سہ ماہی میں لاک ڈاؤن برقرار رہ سکتاہے اور ٹیکس وصولیوں کا انحصار لاک ڈاؤن کے مکمل خاتمے پر ہے۔ایف بی آر ذرائع کا بتانا ہے کہ معاشی سرگرمیوں میں دوسری سہ ماہی کے دوران بحالی کا امکان ہے تاہم اگلے مالی سال کے دوران معاشی سست روی برقرار رہے گی اور سست روی برقرار رہنے سے ٹیکس وصولیوں میں واضح کمی آتی ہے۔

اختلافات

مزید :

ملتان صفحہ آخر -