ڈاکٹر سید عبدالحمید گیلانی نوناری: صوفی ودرویش شخصیت

ڈاکٹر سید عبدالحمید گیلانی نوناری: صوفی ودرویش شخصیت

  

سید عارف نوناری

 سید عبدالحمید گیلانی ونوناری پاکستان کے ان صوفی و درویش شخصیات میں شامل ہیں جن کے حسن واخلاق سے معاشرہ بے حد متاثر تھا ہجرت کر کے ان کا خاندان پاکستان آیا ان کی شخصیت کے کئی پہلو ھیں جن سے عام آدمی بھی متاثر ھوے بغیر نہیں رہ سکتا تھا سادہ زندگی گزاری آپ کے حسن واخلاق سے متاثر ھو کر کئی ھندو خاندان اسلام میں داخل ھوے.تحریک پاکستان میں ان کے آباو اجداد کی بے شمار قربانیاں ھیں وہ  مذھبی دینی لگاو کی وجہ سے منفرد مقام رکھتے ھیں ان کی تصوف پر کئی کتابیں قوم کے لئے سرمایہ ہیں  ڈاکر سید عبدالحمید گیلانی کی زندگی کے کئی پہلو ھیں ان کا خاندان بھارت میں بہت نمایاں مقام رکھتا تھا حکمت ان کی بہت مشہور تھی اور ان کے خاندان کے قد بہت لمبے تھے پاکستان کی تحریک میں ان کے خاندان کی خدمات کو فراموش نہیں کیا جاسکتا ھے ڈاکڑ سید عبدالحمید گیلانی نوناری نے اپنی زندگی کے ایام مشکل حالات میں گزارے کیونکہ تقسیم ھند کے وقت ان کا تما خاندان شہید ھو گیا وہ تنہا پاکستان آے تھے ھندستان میں ان خے والد رمضان شاہ اعلی عہدہ پر فائز تھے لیکن پاکستان میں انھیں بھارت میں زمین تھی وہ پاکستان آکر کلیم کرنے کے باوجود حکونت پاکستان نے الاٹ نہیں کی تھی وہ متقی اور پرھیزگار انسان تھے ان کے چچا یوسف شاہ کا شمار جید علما میں ھو تا تھا ان کی زندگی کے بے شمار اولیا اللہ والے واقعات گاوں کے لوگ سناتے ھیں وہ اردوگرد دیہاتوں کے عوام کے فیصیلے بھی کرتے ڈاکڑ عبد الحمید سادہ ز[10:51 AM, 5/22/2021] Naeem Sahib: وہ تصوف کی کی منازل طے کر چکے تھے گاوں اور اردگرد کے بعض لوگوں کو ان کی وفات کے بعد حقیت کا پتہ چلا کہ وہ ایک دوریش انسان تھے لوگوں نے ان کی باتیں جب شئیر کیں تو زندگی کی راز و نیاز کی باتیں کھل کر سامنے آئیں 18   سال ان کے گزر جانے کے بعد بھی ابھی اکثر محفلوں میں لوگ ان کا ذکر تے ھیں جب بھی کہیں سفر کرتے تو مجھے ساتھ لے جاتے ان کی گفتگو میں میں کبھی دنیاوی پہلو نہیں دیکھے ان کی زندگی پر کتاب زیر ترتیب ھے ڈاکڑ سید عبد الحمید گیلانی کا شجرہ نسب شیخ سید عبدالقادر جیلانی سے ملتا ھے ان کا سالانہ عرس مبارک یکم اپریل کو ھوتا ھے ان کا مزار قصبہ نونار عبد اللہ شاہ غازی کے نو گز مزار کے پہلو میں ھے والدہ بھی وھاں ھی مدفون ھیں ان کے بیٹے ڈاکڑ سید امین گیلانی راقم الحروف ڈاکڑ پروفیسر سید عبدالوحید یو نیورسٹی آف اکاڑہ ڈاکڑ سید عبد المجید گیلانی ھیں۔

ان کی زندگی میں ان کے دوست بھی اللہ والے تھے جن میں منظور اور مولوی نور شامل ھیں گاوں میں جہاں بھی بیٹھ جاتے محفل سج جاتی اور کء کء گھنٹے جاری رکھتی لوگوں کو نیکیاں کر نے کی تلقین کرتے اورخود بھی لوگوں کے لیے آسانیاں پیدا کرتے اولاد سے دوستانہ سلوک کرتے اور ان کی اچھی تربیت کے لئے ھمہ تن گوش رکھتے ان کو جب دفن کر کے آے تو قبر سے نور کی شاعیں مسلسل جاری رھیں ان کے خیالات اور زندگی میں تصوف کا رنگ کوٹ کوٹ کر بھرا ھوا تھا نبی کریم سے اتنا عشق تھا کہ ھم نے ان کو عبادت کرتے اکثر زارو قطار روتے دیکھا ان کی زند گی اللہ اور اس کے رسول کے عشق میں گزری بجوں کو دم کرتے تو بجے رونے کی عادت چھوڑ دیتے ھماری گھر میں عورتوں اور مردوں کا رش لگا رھتا دور دور سے لوگ دم کروانے کے لیے آتے اور اللہ کے فضل و کرم سے صحت یاب ھو جاتے اپنے بچپن کے واقعات ہمیں ستاتے تو انکھوں سے آنسو جاری ھو جاتے کہ کس طرح ان کا خاندان تقسیم ھند کے وقت سکھوں نے جس ٹرین پر حملہ کیا شہید ہوا اور کسی انھوں نے یتیمی کی زندگی گزاری۔

مزید :

ایڈیشن 1 -