حکومتی اعدادو شمار الفاظ کا گورکھ دھندہ ہیں،پروفیسر ساجد میر

  حکومتی اعدادو شمار الفاظ کا گورکھ دھندہ ہیں،پروفیسر ساجد میر

  

  لاہور (پ ر)  مرکزی جمعیت اہل حدیث پاکستان کے سربراہ سینیٹر  پروفیسر ساجد میر نے حکومتی اعداد وشمار کو الفاظ کا گورکھ دھندہ قرار دے کر مسترد کرتے ہوئے کہا ہے حکومت کی معاشی بہتری صرف سوشل میڈیا پر آرہی ہے۔اربوں روپے کے اشتہاروں کے ذریعے معیشت کی تباہی، بے روزگاری میں بہتری نہیں آسکتی۔عمران خاں نے پہلے خود معیشت تباہ کی۔ اب اسے بہتردکھانے کے لئے اربوں روپے کی جھوٹی اشتہاری مہم چلا رہے ہیں۔ عمران خاں نے اپنے ساتھیوں کے ساتھ مل کر عوام کو لوٹا۔ آپ کو اشیائے ضروریہ کی قیمتوں کا کیا پتہ آپ کا کچن اے ٹی ایمز چلاتے  ہیں۔ اس امر کااظہار انہوں نے چار سدہ میں بیگم نسیم ولی خاں کی وفات پر امیر حیدر ہوتی اور میاں افتخار حسین کے ساتھ اظہار تعزیت کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ اسرائیل ناجائز بچہ ہے جو کہ قبضہ مافیا ہے۔

تاریخ میں دیکھا جائے تو یہودیوں کا تناسب تین فیصد تھی،75فیصد مسلمان تھے اور باقی عیسائی تھے،اب نسل پرستی کا مظاہرہ کر کے اسرائیل طول پکڑ گیا،غزہ سے متعلق کہا جاتا ہے دنیا میں سب سے بڑی جیل ہے،جہاں سب چیزیں چیک کر کے بھیجی جاتی ہیں،فلسطین کا مسلہ انسانی حقوق اور آزادی کا ہے اور انکے بڑے دعویدار مغربی ممالک میں موجود ہیں اور اس پر انہوں نے آنکھیں چرا لیں،حماس نے وسائل نہ ہونے کے باوجود جارحانہ حفاظت کی وہ قابل ستائش ہیں،یہاں ہمیں چاہیے انکی حوصلہ افزائی کے لیے طبی امداد،مالی امداد،عالمی فنڈز درکار ہیں،پاکستان سمیت دیگر اسلامی ممالک ٹیکنیکل امداد کرنی چاہیے مطلب دفاعی صلاحیت فراہم کرنی چاہیے۔ اس موقع پر مرکزی ناظم اعلی سینیٹر ڈاکٹرحافظ عبدالکریم اور ناظم سیاسی امور چوہدری کاشف نواز رندھاوا بھی موجود تھے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -