نواب فتح علی خان قزلباش انصاف کیلئے دربدر ٹھوکریں کھانے پر مجبور 

 نواب فتح علی خان قزلباش انصاف کیلئے دربدر ٹھوکریں کھانے پر مجبور 

  

لاہور(اپنے نمائندے سے) نواب فتح علی خان قزلباش اپنے ساتھ ہونیوالی جعلسازی پر انصاف کے حصول کیلے دربدر ٹھوکریں کھانے پر مجبور ہو گئے۔ سات ماہ قبل اینٹی کرپشن میں دی جانیوالی درخواست اور انکوائری بھی بااثر لینڈ مافیا کے اثرورخ کا شکار ہوکر سرخ فیتے کی نذر ہوگئی۔ ڈپٹی کمشنر لاہور مدثر ریاض نے نواب فتح علی خان کی درخواست پر تحقیقات کرنے کے بعد ان کے موقف کو درست قرار دیتے ہوئے جعلسازی کی تصدیق کردی۔نواب فتح علی خان قزلباش کا کہنا تھا کہ اینٹی کرپشن نے ڈپٹی کمشنر لاہور کے اس فیصلے کو انکوائری کا حصہ بنانے سے انکار کردیا،میری والدہ کی جائیداد اور ہمارا وراثتی حق ہتھیانے کیلئے تمام پلاننگ ہمارے گھر کے نوکر صابر حسین نے کی، ریونیو ریکارڈ میں ہونیوالی ٹیمپرنگ اور ردوبدل کی ناصرف نشاندہی کردی بلکہ تمام شواہد بھی اینٹی کرپشن کو فراہم کیے گے مگر پھر بھی تاخیر کا سامنا ہے،ڈپٹی کمشنر لاہور نے ریونیو ریکارڈ کی پڑتال اور انکوائری کے بعد درست فیصلہ کیا جس کو اینٹی کرپشن والے انکوائری کا حصہ بنانے سے تاحال قاصر ہیں۔ترجمان اینٹی کرپشن کا کہنا تھا کہ انکوائری میرٹ پر کی جارہی ہے الزام ثابت ہونے پر قانونی کارروائی عمل میں لائی جائیگی۔

 نواب فتح علی خان

مزید :

صفحہ آخر -