بلدیاتی نمائندوں کی ٹاؤن ہال کے تالے توڑنے کی کوشش، نذیر سواتی پولیس کیساتھ جھڑ پ میں بے ہوش

بلدیاتی نمائندوں کی ٹاؤن ہال کے تالے توڑنے کی کوشش، نذیر سواتی پولیس کیساتھ ...

  

لاہور (جنرل رپورٹر،مانیٹرنگ ڈیسک) بلدیاتی نمائندوں کے اجلاس کی کال پر ٹاؤن ہال کے مرکزی دروازوں کو تالے لگادیئے گئے۔ بلدیاتی نمائندوں کی جانب سے تالے توڑنے کی کوشش پر پولیس کے ساتھ جھڑپ ہو گئی۔سپریم کورٹ کے حکم پر کرنل ریٹائرڈ مبشر جاوید نے ہنگامی اجلاس طلب کیا۔ بلدیاتی نمائندے پہنچے تو ٹاؤن ہال کو تالے لگے تھے۔ خواتین ممبران آپے سے باہر ہو گئیں۔ پروین اختر اور زبیدہ بھٹی نے تالے توڑنے کی کوششں کی۔ پنجاب حکومت کیخلاف نعرے بازی کرتی رہیں۔پولیس کی بھاری نفری ٹاؤن ہال پہنچی تو بلدیاتی نمائندوں کی پولیس کیساتھ جھڑپ ہو گئی۔ بلدیاتی نمائندے ٹاؤن ہال کے اندر جانے کی کوشش کرتے رہے، نذیر سواتی پولیس سے جھڑپ کے دوران بے ہوش ہو گئے۔ انتظامیہ نے بلدیاتی نمائندوں کے احتجاج پر مرکزی دروازے کے تالے کھول دیئے۔

 ٹاؤن ہال 

لاہور(جنرل رپورٹر) لاہور کے چیئر مینوں و ڈپٹی چیئر مینوں کا اہم اجلاس لارڈ میئر لاہور کرنل مبشر جاوید کی سربراہی میں ٹاؤن ہال لاہور میں ہوا۔ اجلاس میں لاہور کے متعدد چیئر مین و ڈپٹی چیئر مینوں نے شرکت کی۔ اجلاس میں مئیر لاہور کرنل رمبشر جاوید،ڈپٹی مئیر میاں طارق،مہر محمود۔مشتاق مغل،راؤ شہاب الدین، بلال چوہدری عامر خان شہباز حیدر،محمد جاوید،جواد بٹ،زاہد خان،عارف کشمیری،علی بٹ سمیت بلدیاتی نمائندوں کی بڑی تعدادنے ٹاؤن ہال اجلاس میں شریک کی،اجلاس کے آغاز پرکشمیری اور فلسطینیوں کے لئے دعا کروائی گئی۔ اجلاس میں چیف جسٹس آف پاکستان کے حق میں قرارداد منظور منظور کی گئی جس میں بلدیاتی اداروں کی بحالی پر انہیں خراج تحسین پیش کیا گیا،اجلاس میں ایک اور قرارداد کے ذریعے مطالبہ کیا گیا کہ مقامی حکومتوں کو بحال اور ان کے دفاتر بلدیاتی نمائندوں کو واپس کئے جائیں، بلدیاتی ایکٹ 2013 نافذ کیا جائے۔ مقامی حکومتوں کے سربراہان کو فی الفور ان کے اصل فرائض منصبی کی ادائیگی کیلئے واپس بھیجا جائے۔ 25 مارچ سے ایم سی ایل کے تمام کنٹریکٹ اور ادائیگیاں منسوخ کی جائیں۔ 25 مارچ کے بعد سے افسران اور ملازمین کے تمام اقدامات غیر قانونی ہیں۔لارڈ میئر نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اجلاس میں جن افسران نے شرکت نہیں کی ان کے خلاف کارروائی کی جائیگی، ہم نے یہ جنگ قانونی طور پر جیت لی ہے۔یونین کونسل کے اختیارات فوری بلدیاتی نمائندوں کو دیے جائیں، انہوں نے یہ بھی کہا کہ بلدیاتی نمائندوں کے لئے ترقیاتی مد میں تین لاکھ ماہانہ دیے جاتے تھے وہ نہ صرف بحال کئے جائیں بلکہ یہ فنڈزدس لاکھ تک بڑھائے جائیں۔ ان کا کہنا تھا کہ دو ہفتے تک مطالبات تسلیم نہ کئے جانے پر بلدیاتی نمائندوں کا اجلاس دوبارہ بلایا جائے گا اور آئندہ کا لائحہ عمل طے کیا جائے گا، اور ٹاؤن ہال کے باہر روڈ پر مطالبات کی منظوری تک دھرنا دیا جائے گا۔

لارڈ میئر

مزید :

صفحہ اول -