اسرائیلی وزیر کا بیان، پاکستانی عمارت کی تصاویر کا استعمال قابل مذمت، دفتر خارجہ

 اسرائیلی وزیر کا بیان، پاکستانی عمارت کی تصاویر کا استعمال قابل مذمت، دفتر ...

  

 اسلا م آباد (سٹاف رپورٹر) ترجمان دفتر خارجہ حفیظ چوہدری نے کہا ہے کہ اسرائیلی وزیر کا بیان نا قابل قبول ہے پاکستانی عمارت کی تصاویر کا استعمال قابل مذمت ہے، پاکستان میں ا مر یکہ کا کوئی فوجی اڈہ یا ائیر بیس نہیں اور نہ ہی پاکستان اور امریکہ کے درمیان فوجی اڈوں کے قیام کا کوئی نیا معاہدہ نہیں ہوا،بھارت بامقصد مذاکرات کیلئے سازگار ماحول پیدا کر ے تنازعہ کشمیر کے حل بغیر بامقصد مذاکرات ممکن نہیں،ہم چاہتے ہیں افغانستان میں انخلاء کے بعد سکیورٹی ویکیوم نہ ہو۔ ترجمان دفتر خارجہ حفیظ چوہدری نے ہفتہ وار بریفنگ میں کہاتاجکستان کے صدر نے دورے پاکستان میں وزیر اعظم اور وزیر خارجہ سے ملاقات کی ملاقاتوں میں مختلف شعبہ جات میں تعاون کے فروغ پر اتفاق کیا گیا دونوں ملکوں کے درمیا ن ایم او یوز پر بھی دستخط کئے گئے جبکہ جنرل اسمبلی صدر وولکن بوزکیر نے گذشتہ ہفتے پاکستان کا دورہ کیا۔عراقی ہم منصب کی دعوت پر وزیر خارجہ نے عراق کا دورہ کیا دورے میں دو طرفہ تعلقات سمیت علاقائی و عالمی امور پر بات چیت کی گئی پاکستانی زائرین کے عراق میں سہولیات کے حوالے سے بھی بات چیت کی گئی، افغان ویلوسی جرگہ کے سپیکر نے پاکستان کا دورہ کیا، وزیر خارجہ سے ملاقات میں افغان امن عمل پر تبادلہ خیال کیا گیاافغانستان پاکستان چین سہہ فریقی مذاکرات آج ہوں گے۔ وزیر خارجہ ان ورچوئل مذاکرات میں شرکت کریں گے۔ فلسطین میں 21 مئی کو سیز فائر اعلان مثبت پیش رفت ہے ہم مسئلہ فلسطین کے پائیدار اور مستقل حل کے حامی ہیں۔ فلسطین کا حل دو ریاستی حل میں ہی پنہاں ہے۔ فلسطین میں انسانی حقوق خلاف ورزیوں کی اقوام متحدہ سطح پر تحقیقات ہونی چاہیں۔ مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی صورت حال دگرگوں ہے کشمیری بھارتی فوج کے ہاتھوں ٹارچر ریپ اور ماورائے عدالت قتل جیسے سنگین جرائم کا سامنا کر رہے ہیں۔ 

دفتر خارجہ

مزید :

صفحہ اول -