بجٹ میں ریلیف ملاتویہ معجزہ ہوگا، حکومتیں عوام کو دھوکہ دیتی ہیں 

بجٹ میں ریلیف ملاتویہ معجزہ ہوگا، حکومتیں عوام کو دھوکہ دیتی ہیں 

  

 ملتان(نیوز رپورٹر)پاکستان کیمسٹ اینڈ ڈرگسٹ ایسوسی ایشن نے بجٹ 2021_2022 کو گذشتہ سے پیوستہ قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ حکومتیں عوام کو اعداد و شمار کے گورکھ دھندے میں الجھا کر ہمیشہ سے لالی پاپ دیتی آئی ہیں آئندہ بجٹ بھی عوام کے لیئے(بقیہ نمبر1صفحہ6پر)

 بالخصوص میڈیسن کے شعبہ سے متعلقہ تاجر برادری کے لیئے اطمینان کا باعث نہیں ہوگا ان خیالات کا اظہار ڈویثزنل صدر محمد اختر بٹ اور دیگر عہدیداران علی حسین صدیقی، حاجی محمد سلیم، بابر قریشی، محمد کامران، محمد جمیل، اقبال عزیز، فیصل ابراہیم، محمد اکمل بھٹہ، اطہر سعید پیرزادہ، رانا طاہر و دیگر نے کہا کہ ہمیشہ کی طرح روایتی بجٹ پیش ھو گا حقیقت یہ ھے کے ہمیشہ قرضے لیکر بجٹ بنایا جاتا ھے اور قرضے دینے والے ہمیشہ اپنی شرائط پر دیتے ہیں جس سے عوام کو ریلیف تو نہیں ملتا البتہ گورکھ دھندہ بنا کر پیش کر دیا جاتا ھے اور حسب معمول سارا سال منی بجٹ آتے رہتے ہیں کورونا وبا، غربت، مہنگائی اور بے روزگاری میں گھری ہوئی عوام امیدوں پر ہی زندہ رہتے ہیں اگر عوام کو کوئی ریلیف بجٹ میں دیا گیا تو یہ معجزہ ھو گا ادویات، بجلی، پٹرول، گیس اور تمام بنیادی ضروریات زندگی کے حصول کیلئے عوام بھکاریوں کی ذلیل رسوا ھوتے جو کے حکمرانوں کیلئے لمحہ فکریہ ھے کسی بھی مد میں عوام کو ریلیف ایک خواب بن چکا ہے انہوں نے کہا تبدیلی سرکار کو اقتدار میں آئے تین سال گزر چکے ہیں لیکن تاجر برادری کو بجٹ کی تیاری میں مشاورت اور ان سے تجاویز لینا تو دور کی بات ہے ان ٹیکس پیئرز تاجروں کو سازگار ماحول بھی فراہم نہیں کیا جارہا کہ وہ اطمینان سے کاروبار کرسکیں جنوبی پنجاب کی سب سے بڑی میڈیسن مارکیٹ گھنٹہ گھر ملتان تمام بنیادی سہولتوں سے محروم ھے بجلی کی بے ہنگم جھولتی تاریں آئے روز پریشانی کا باعث بنتی ہیں شارٹ سرکٹ کے باعث متعدد بار آتشزدگی کے واقعات رونما ہوچکے ہیں جن میں میڈیسن سے متعلقہ تاجروں کا کروڑوں روپے کا نقصان ہوچکا ہے لیکن میپکو کے کان پر جوں تک نہیں رینگ پائی اور نہ ہی ضلعی حکام نے اس حساس ایشو کو سیریس لیا ہے انہوں نے کہا کہ تاجر برادری بجٹ کے اہم سٹیک ہولڈرز میں شمار ہوتی ہے اور حکمران طبقہ ووٹ لینے کے دوران ہمیں معیشت میں ریڑھ کی ہڈی قرار دیتا ہے لیکن یہ سب کچھ الیکشن تک ہی رہتا ہے انہوں نے سخت الفاظ میں ہدف تنقید بناتے ہوئے کہا کہ تاجروں سے کروڑوں روپے کے ٹیکسز وصولی کے باوجود صفائی سیورج سڑیٹ لایٹس سیکورٹی کا برا حال مارکیٹ میں آوارہ کتوں کی بھرمار کوئی پرسان حال نہیں وزرا انتظامیہ و تمام متعلقہ اداروں کو درخواستیں دے دے کر عاجز آ چکے ہیں کوئی سننے والا نہیں کوئی پوچھنے والا نہیں سیوریج کے گٹروں کے ڈھکن غائب آئے روز حادثے ھوتے ہیں مارکیٹ واسا اور کارپوریشن میں شٹر کاک بن چکی ھم کمشنر ملتان ڈپٹی کمشنر ملتان سے مطالبہ کرتے ہیں میڈیسن مارکیٹ ملتان کے جائز مسائل حل کرنے کے احکامات جاری کرنے کے ترجیحی بنیادوں پر احکامات جاری کئے جائیں بصورت دیگر احتجاج کا سلسلہ شروع کیا جائے گا۔

اظہار خیال

مزید :

ملتان صفحہ آخر -