لسانیت کی باتیں قابل مذمت، یہ ذہنیت ختم کی جائے: ناصر شاہ 

لسانیت کی باتیں قابل مذمت، یہ ذہنیت ختم کی جائے: ناصر شاہ 

  

 کراچی (اسٹاف رپورٹر) صوبائی وزیر بلدیات سندھ سید ناصر حسین شاہ نے گزشتہ رات حسین آباد فوڈ اسٹریٹ پر اوکھائی میمن جماعت اور جیتپور میمن ایسوسی ایشن کے تعاون سے قائم سر آدم جی پارک کا افتتاح کر دیا۔ اس موقع پر وزیر اعلیٰ سندھ کے کوآرڈینیٹر شہزاد میمن، صدر اوکھائی میمن جماعت، صدر جیتپور میمن ایسوسی ایشن آصف مجید، آباد کے محسن شیخانی،اقبال آدم جی، حاجی طیب، عارف مجید، عارف شیخانی، حنیف گوکلانی،الطاف طائی، صدر پی پی پی ضلع وسطی ظفر صدیقی، ڈپٹی کمشنر سینٹرل ڈاکٹر راجہ ایم بی دھاریجو، ایم سی سینٹرل محمد علی زیدی و دیگر موجود تھے۔ پارک کی افتتاحی تقریب اور میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے صوبائی وزیر سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ سر آدم جی کے نام سے منسوب پارک کا افتتاح کرنا باعث فخر ہے، سر آدم جی قائد اعظم کے دست راست رہے ہیں ان کی پاکستان کے لیے خدمات ناقابل فراموش ہیں۔ قومی ہیروز سے منسوب چیزوں کو سنبھالنا ہم سب کی زمہ داری ہے۔  انہوں نے کہا کہ اس جگہ کی حالت بہت خراب تھی۔ اوکھائی میمن جماعت اور جیتپور میمن ایسوسی ایشن نے اس پارک کی بحالی میں بہترین کام کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ حسین آباد کی مرکزی سڑک کو بہتر کیا ہے اور ٹریفک کے مسائل میں کمی ہوئی ہے۔ سندھ حکومت چیئرمین بلاول بھٹوزرداری کے ویژن کے مطابق پورے صوبے کو سنواریں گے اور ضلع وسطی بہت ترقی کرے گا۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ ضلع سینٹرل میں ہمارا کوئی ایم پی اے اور ایم این اے بھی نہیں، اس ضلع میں صرف ہمارا ایک یونین کونسل چیئرمین تھا۔اس کے باوجود ضلع میں کروڑوں روپے کے ترقیاتی کام کروائے ہیں۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ کچھ روز سے پریس کانفرنسز میں لسانیت کی باتیں کی جارہی ہیں۔ اگر انہوں نے قائد سے علیحدگی اختیار کی ہے تو ان کی سوچ سے بھی علیحدگی اختیار کریں اور بھتہ خوری، بوری بند لاشوں اور لسانیت کی ذہنیت ختم کریں۔ آپ ہمارے بھائی ہیں، جب قومی دھارے میں آئے ہیں تو خدارا اپنے ذہن میں تبدیلی لائیں اور مل کر اس شہر کی بہتری کے لیے کام کریں۔انہوں نے کہا کہ تمام فیصلے این سی او سی کی گائیڈ لائنز کے تحت کئے ہیں، مشکل فیصلے ہیں۔ تاجر برادری کی مشکلات کا ہمیں احساس ہے۔ سندھ بینک کے ذریعے تاجر برادری کی معاونت کی جا رہی ہے۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے اوکھائی میمن جماعت کے صدر عبدالوحید میمن نے کہا کہ میمن برادری ملک کی ترقی میں اہم کردار ہے، کچھ لوگ تاجر برادری کو استعمال کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ ہم وفاقی اور سندھ حکومت کے ساتھ ہیں شہر کا امن خراب ہونے نہیں دینگے۔ جیتپور میمن ایسوسی ایشن کے صدر آصف مجید نے کہا کہ سندھ حکومت سے مل کر یہ پارک قائم کیا ہے، کراچی شہر کو اس طرح کے 100 پارک دے سکتے ہیں۔ آخر میں صوبائی وزیر بلدیات سندھ سید ناصر حسین شاہ اور دیگر مہمانان کو اوکھائی میمن جماعت اور جیتپور میمن ایسوسی ایشن کے جانب سے شیلڈز پیش کی گئیں۔

کراچی (اسٹاف رپورٹر)سندھ حکومت نے شادی ہال مالکان کا بڑی خوشخبری سنادی ہے۔تفصیلات کے مطابق  پاکستان کیٹرز ڈیکوریٹرز ایسوسی ایشن کے وفد نے وزیربلدیات سندھ ناصر شاہ سے ملاقات کی اور انہیں بتایا کہ شادی ہالز بند ش سے کئی افراد بے روزگارہوگئے، جس کے باعث ہزاروں افراد کے گھروں کے چولہے ٹھنڈے پڑ گئے ہیں۔اس موقع پر ناصر حسین شاہ نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ شادی ہالز کی بندش کا سخت فیصلہ مجبوری میں کیاتھے، حکومت سندھ کو آپ کی تکالیف کا احساس ہے۔ملاقات میں چیئرمین بینکوئٹ ہال ایسوسی ایشن نے صوبائی وزیر سے مطالبہ کیا کہ شادی ہالزکو ایس او پیز کیساتھ کھولنے کی اجازت دی جائے، جس پر ناصر حسین شاہ نے چھ جون سے شادی ہال کھولنے کی یقین دہانی کرائی۔

مزید :

صفحہ اول -