قصور: ضلع کونسل دفتر میں داخلہ بند ہونے پر بلدیاتی نمائندوں کا سڑک پر اجلاس

قصور: ضلع کونسل دفتر میں داخلہ بند ہونے پر بلدیاتی نمائندوں کا سڑک پر اجلاس

  

 قصور (بیور و رپورٹ)ضلع کونسل قصورکے دفتر کو تالے لگادینے کی وجہ سے ضلعی اسمبلی کا اجلاس سابق سینئر وائس چیئر مین ملک اعجاز احمد خاں کی صدرات میں سڑک پر کیا گیا۔ اجلاس میں ممبران ضلعی اسمبلی نے احتجاج کرتے ہوئے حکومت مخالف نعرہ بازی کرتے ہوئے ضلع کونسل کے دفتر کو کھولنے کا مطالبہ کیا۔  اجلاس میں خطاب کرتے ہوئے سابق چیئرمین ضلع کونسل قصور رانا سکندر حیات خاں نے کہا کہ ہم قانون اور قومی اداروں کا احترام کرتے ہیں مگر دھونس دھاندلی برداشت نہیں کریں گے۔انہوں نے کہا کہ ہم انتظامیہ سے بھیک مانگنے نہیں بلکہ اپنا قانونی حق لینے کے لیے آئے ہیں جو حق ہمیں عوام نے دیا ہے۔ ضلعی انتظامیہ کو عدلیہ کے فیصلوں کا احترام کرنا چاہیے کہ اس نے ریاست کی وفاداری کا حلف اٹھایا ہوا ہے،حکومت کے غیرقانونی اقدام ماننے سے گریز کریں۔رانا سکندر حیات خاں نے کہا کہ سپریم کورٹ آف پاکستان نے حکومت کے فیصلے کو غیر قانونی قرار دیکر ہمیں ہمارا قانونی حق دیا ہے۔ حکومت نے غیر قانونی طریقہ سے بلدیاتی اداروں کو تحلیل کرکے عوامی مینڈیٹ کی توہین کی تھی مگر ہم عوامی مینڈیٹ کا احترام کرتے ہیں اور کروائیں گے۔  اس میں رکاوٹ پیدا کرنے والے افسران بہت جلد قانون کی گرفت میں ہونگے۔ انہوں نے انتظامیہ کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ آج ہم دفتر کے باہر سٹرک پر اجلاس کررہے ہیں مگر قانون کو ہاتھ میں نہیں لے رہے، لیکن اگلا اجلاس ہم ضلع کونسل ہال میں کرینگے،پیدا ہونے والی روکاوٹوں کو دور کرنا جانتے ہیں۔ اجلاس میں ضلع بھرکے چیئرمینز،سپیشل سیٹ کی خواتین ممبران مسلم لیگی عہدیدران ورکرز بھی موجودتھے اجلاس میں ممبران نے آئندہ مالی سال کے بجٹ کے لیے اپنی اپنی تجاویز دیں۔  سابق وائس چیئرمین ضلع کونسل قصور سردار عزیراحمد نے کہا کہ حکومت نے بلدیاتی اداروں کو تحلیل کرکے پنجاب کے عوام کو بنیادی سہولتوں سے محروم کر رکھا ہے۔  اجلاس میں بطور مہمان خصوصی شرکت کرنے والے یوتھ ونگ کے ضلعی صدر ملک مظہر رشید خاں نے کہا کہ بلدیاتی اداروں کی بحالی کیلئے رانا سکندر حیات خاں کی جدوجہد ہمیشہ یاد رکھی جائے گی جمہوریت کی بحالی میں مسلم لیگ ن نے ہمیشہ اپنا مثبت کردار ادا کیا ہے۔

رانا سکندر

مزید :

پشاورصفحہ آخر -