انتظامیہ نے دفاتر کو تالے لگادیئے، یونین چیئرمینوں کا سٹرک پر اجلاس، نعرے بازی 

انتظامیہ نے دفاتر کو تالے لگادیئے، یونین چیئرمینوں کا سٹرک پر اجلاس، نعرے ...

  

 ملتان ( سپیشل رپورٹر  )  سپریم کورٹ کے حکم کے بعد بلدیاتی نمائندوں کی بحالی کا معاملہ، میٹرو پولیٹن کارپوریشن کیتالے لگے گیٹ کے سامنے کنونئیر سعید انصاری کی زیر صدارت اجلاس، بلدیاتی چیئرمینوں نیاحتجاجا آئندہ اجلاس ہائیکورٹ کے سامنے اور 7دن بعد سٹرکوں پر اجلاس بلانے کی قرارداد منظور کر لی ہے، مسلم لیگ ن کے سابق صوبائی وزیر وحید آرائیں کے علاوہ دیگر مسلم لیگی عہدے داروں اور سابق ایم پی اے، ایم این ایز نے چیئرمینوں کے اجلاس میں شرکت نہ کی۔ تفصیل کے مطابق ملتان میں سپریم کورٹ کے حکم کے بعد بلدیاتی نمائندوں کی بحالی کے معاملہ پر اجلاس سے قبل میئر ملتان نویدالحق آرائیں نے تمام چیئرمینوں کو صبحانہ پر مدعو کیا، بعدازاں میئر نویدالحق آرائیں ریلی کی شکل میں ممتاز آباد دفتر پہنچ گئے، انتظامیہ کی جانب سے کسی بھی ن خوشگوار واقعے سے بچنے کیلئے سیکورٹی کے انتظامات کر رکھے تھے، انتظامیہ نے اجلاس نہ کرانے کیلئیمیٹرو پولیٹن کارپوریشن کے مرکزی دروازے کو ہڑتال کا نوٹس چسپاں کرکے تالے لگا رکھے تھے، بلدیاتی نمائندگان کالی پٹیاں باندھ کرڈپٹی میئرو کنونئیر سعید انصاری کی سربراہی میں کارپوریشن آفس کے گیٹ کے باہر احتجاج کیا اور گیٹ کے باہر دریاں اور کرسیاں لگا کر اجلاس شروع کردیا گیا اجلاس میں مئیر ملتان نویدالحق آرائیں نے کہا کہ ایک چیئرمین 25سے 30ہزار ووٹ لیکر چیئرمین منتخب ہوا ہے، میٹرو پولیٹن کارپوریشن کی جانب سے اجلاس منعقد کرانے کی اجازت نہ دینا سپریم کورٹ آف پاکستان کے فیصلے کی تذلیل ہے، عوام کے منتخب نمائندے باہر بیٹھے ہیں جبکہ بیوروکریسی ٹھنڈے دفاتر میں بیٹھے ہیں،انہوں نے قرارد داد پیش کی کہ بلدیاتی نمائندگان کا اجلاس ہر ہفتے سٹرکوں پر ہوگا بلکہ آئندہ اجلاس ہائیکورٹ کے سامنیہوگا،جو قرارداد منظور کر لی گئی تھی، ڈپٹی میئر منور احسان قریشی نے کہا ہے کہ یہ حکومت جمہوریت کے نام پر بدنما داغ ہے، رمضان میں مسجدوں میں عوام کو سٹریٹ لائٹ سے محروم کردیا گیا اور اب آٹا 75روپے اور چینی 110 کرکے عوام کو لوٹا جاررہا ہے، توہین عدالت پر دو وزیراعظموں کو ہٹایا گیا ہے، انہوں نے قرارداد پیش کی کہ سپریم کورٹ آف پاکستان پی ٹی آئی کی عوام دشمن پالیسیوں پر سوموٹو ایکشن لے اور توہین عدالت کرنے والوں کے خلاف قانونی کاروائی کرے۔ چیئرمین رانا سجاد نے کہا ہے کہ جمہوریت دشمن سیاسی پارٹی کا ظلم بڑھتا جارہا ہے، ہم ہر صورت میں اجلاس کریں گے، حامد آرائیں نے کہا ہے کہ سٹی پیکج کے تحت چلائی جانیوالی سکیموں کا آڈٹ کیا جانا ضروری ہے، تفصیلی رپورٹ میئر ملتان کو پیش کی جائے اور ان سالوں میں ایڈمنسٹریٹرز کے احکامات منسوخ کئے جائیں، عمران ارشد نے کہا کہ انتظامیہ کی جانب سے اجلاس منعقد نہ کرنے دینا سپریم کورٹ آف پاکستان کے منہ پر تماچہ ہے، حکومت سپریم کورٹ آف پاکستان کے احکامات پر عمل درآمد کرے اور تمام بجٹ چیئرمینوں میں برابر تقسیم کرے۔ چوہدری عبدالرحیم، چوہدری لعل، اسلم ڈوگر، ہمایوں اسلم، طاہر عباس اعوان، ثروت خان، رسالت خان شیروانی، اختر عالم قریشی، ثاقف راحیل، چوہدری عبدالستار، جلیل خان بابر نے کہا ہے کہ پنجاب حکومت سے برتھ، ڈیتھ سرٹیفکیٹ کی فیسوں میں کئی گنا اضافہ کردیا ہے، ختم کی جائے، چیئرمین سیکرٹریز کو مراسلہ بھیجیں اور سٹرکوں پر اجلاس منعقد کریں، ہمارے حق سے محروم کردیا گیا ہے، میٹرو پولیٹن کارپوریشن کے ایڈمنسٹریٹرز کے خلاف ہائیکورٹ میں رٹ  سمیت ترقیاتی اداروں کو فنڈز دینیسے متعلق قرارداد پیش کی گئی جو کہ منظور کر لی گئی ہے، اجلاس میں جلیل خان بابر، رسالت خان شیروانی، صدیق انصاری، اکبر انصاری, زاہد بشیر، قصور بھٹی، اعجاز فخر، شیخ رفیق، حامد ارائیں، تاج چوہان، عمران ارشد، ڈاکٹر ثاقب، اسلم ڈوگر، ملک عبدالرحیم، چوہدری اقبال، چوہدری لعل خان، چوہدری لیاقت ارائیں، روبینہ، فہمیدہ، رانا سجاد، اسلم ہمایوں، چوہدری افتخار  سمیت51 سے زائد چیئرمینوں نے شرکت کی۔

نعرے

مزید :

صفحہ اول -