پاکستان میں رہتے ہوئے اس کا مجھے اندازہ نہیں تھا، ملالہ یوسفزئی کا نیا بیان سامنے آگیا

پاکستان میں رہتے ہوئے اس کا مجھے اندازہ نہیں تھا، ملالہ یوسفزئی کا نیا بیان ...
پاکستان میں رہتے ہوئے اس کا مجھے اندازہ نہیں تھا، ملالہ یوسفزئی کا نیا بیان سامنے آگیا

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) ملالہ یوسف زئی کورونا وائرس سے لڑکیوں کی تعلیم متاثر ہونے کے خدشے کا اظہار کر دیا۔ میل آن لائن کے مطابق ایپل ٹی وی پر ایپل کے چیف ایگزیکٹو آفیسر ٹم کک سے گفتگو کرتے ہوئے ملالہ یوسف زئی نے کہا ہے کہ ”کورونا وائرس کی وجہ سے ترقی پذیر ممالک کی کم از کم 2کروڑ لڑکیاں دوبارہ سکول نہیں جا سکیں گی۔ ان لڑکیوں کو خاندانوں کے مالی حالات خراب ہونے پر سکول سے اٹھا لیا جائے گا تاکہ وہ کام کاج کریںا ور اس وباءکے باعث مالی حالات دگرگوں ہونے پر خاندان کا ہاتھ بٹائیں۔“

23سالہ ملالہ یوسف زئی کا کہنا تھا کہ ”لڑکیاں اب وباءکی وجہ سے گھروں میں ہیں اور پہلے سے زیادہ گھریلو کام کر رہی ہیں۔ حالات خراب ہونے پر انہیں اپنے خاندانوں کی طرف سے مالی معاونت کرنے کا کہا جا رہا ہے۔ ان لڑکیوں کو قبل از وقت کمانے کی طرف راغب کیا جا رہا ہے اور ان میں سے بیشتر سکول کھلنے پر واپس سکول نہیں جا سکیں گی۔مغربی افریقہ میں جب ایبولا کی وباءپھیلی تھی، اعدادوشمار بتاتے ہیں کہ تب بھی لڑکیوں کے ساتھ کچھ ایسا ہی ہوا تھا۔“

دوران گفتگو ملالہ یوسف زئی کا کہنا تھا کہ ”میں اپنی وادی سوات کو بہت یاد کرتی ہوں۔ میں ان سرسبز و شاداب پہاڑ وں اور دریاﺅں کو دوبارہ دیکھنا چاہتی ہوں۔یہ وہ چیزیں تھیں کہ پاکستان میں ہوتے ہوئے جن کی اہمیت کا مجھے اندازہ نہیں تھا۔ آج وہی چیزیں مجھے سب سے زیادہ یاد آتی ہیں۔“

مزید :

بین الاقوامی -