پولیس افسر کو گالیاں دینے اور پھر تشدد کا شکار ہونیوالا شخص ایک مرتبہ پھر پشاور پولیس کے ہتھے چڑھ گیا

پولیس افسر کو گالیاں دینے اور پھر تشدد کا شکار ہونیوالا شخص ایک مرتبہ پھر ...
پولیس افسر کو گالیاں دینے اور پھر تشدد کا شکار ہونیوالا شخص ایک مرتبہ پھر پشاور پولیس کے ہتھے چڑھ گیا

  

پشاور(مانیٹرنگ ڈیسک) پشاور میں گزشتہ سال نشے میں دھت ہو کر پولیس آفیسرز کو گالیاں دینے اور پھر ان کے ہاتھوں تشدد کا نشانہ بن کر شہرت پانے والے شخص کو ناجائز اسلحہ رکھنے پر ایک بار پھر گرفتار کر لیا گیا۔

 ڈیلی ڈان کے مطابق اس آدمی کا نام رفیع اللہ ہے تاہم وہ عامر تہکالے کے نام سے معروف ہے۔ اسے سٹی پٹرولنگ فورس کے اہلکاروں نے تاج آباد کے علاقے سے گرفتار کیا۔ اس کے قبضے سے بغیر لائسنس پستول برآمد ہونے کے الزام کے تحت مقدمہ درج کر لیا گیا ہے۔

رپورٹ کے مطابق ملزم کے خلاف مقدمہ تھانہ پشتخرہ میں درج کیا گیا، جہاں مزید تفتیش جاری ہے۔ واضح رہے کہ عامر تہکالے نے گزشتہ سال سوشل میڈیا پر پولیس افسران کو گالیاں دی تھیں، جس کے بعد اسے گرفتار کر لیا گیا اور پولیس نے اسے زیرحراست رکھ کر تشدد کا نشانہ بنایا۔ عامر تہکالے پر پولیس تشدد کی ویڈیو بعد ازاں سوشل میڈیا پر وائرل ہو گئی۔ اس ویڈیو کی تحقیقات کے لیے جوڈیشل انکوائری کرائی گئی اور اس وقت کے ایس ایس پی کو تبدیل اور دو تھانوں کے ایس ایچ اوز سمیت چھ اہلکاروں کو گرفتار کرکے ان کے خلاف مقدمات درج کر لیے گئے تھے۔

مزید :

علاقائی -خیبرپختون خواہ -پشاور -