بی جے پی کی گندی ذہنیت‘بالی ووڈ خانوں کی فلموں کے بائیکاٹ کا مطالبہ

بی جے پی کی گندی ذہنیت‘بالی ووڈ خانوں کی فلموں کے بائیکاٹ کا مطالبہ

  

 نئی دہلی(این این آئی) بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کی ایک شعلہ بیان رہنماء سادھوی پراچی نے اپنی گندی ذہنیت کا مظاہرہ کرتے ہوئے اپنی تقریر کے دوران بالی ووڈ کے خانوں کی فلموں کا بائیکاٹ کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ ان کی فلمیں تشدد کا کلچر پھیلاتی ہیں۔انہوں نے نوجوانوں کو انہیں اپنا آئیڈیل نہ بنانے کا مشورہ دیا۔بھارتیہ جنتا پارٹی کی رہنماء سادھوی پراچی نے الزام عائد کیا کہ انڈین فلم انڈسٹری کے خانز بھارت میں لو جہاد پھیلانے کا باعث بن رہے ہیں۔ ہندوؤں کو ان کی فلمیں دیکھنے سے گریز کرنا چاہئے۔انہوں نے آر ایس ایس کے سربراہ موہن بھگوت کے حالیہ بیان کی بھی حمایت کی جس میں انہوں نے نوبیل انعام یافتہ سماجی کارکن مدر ٹریسیا پر الزام عائد کیا گیا تھا کہ وہ مذہبی خدمات کے نام پر تبلیغ کرتی رہیں۔بی جے پی رہنماء کے بقول مدر ٹریسیا خدمات کے نام پر لوگوں کو عیسائیت قبول کرنے کے لیے اکساتی تھیں۔موہن بھگوت نے یہی ریمارکس کہے تھے اور ان کا الزام تھا کہ غریب افراد کی مدد کے پیچھے مدر ٹریسیا کا بنیادی مقصد عیسائیت کی تبلیغ تھا۔ ایونٹ سے خطاب کرتے ہوئے سادھوی پراچی نے کہا کہ ایک بار وہ میرٹھ میں ایک پروگرام میں تھیں جہاں انہوں نے ایک لڑکے سے پوچھا کہ وہ زندگی میں کیا بننا چاہتا ہے اس نے کہا کہ وہ رتیک روشن، شاہ رخ خان، سلمان خان، عامر خان جیسا بننا چاہتا ہے، جب میں نے پوچھا کہ کیوں تو اس کی ماں کا کہنا تھا کہ وہ سب اسٹنٹس کرنے میں ماہر ہیں۔       ہندو انتہا پسند گروپ کی جانب سے تینوں خانوں کی فلموں کے بائیکاٹ کے مطالبے پر انہوں نے کہاکہ میں بجرنگیوں سے کہتی ہوں کہ وہ دیواروں پر لگے شاہ رخ خان، سلمان خان اور عامر خان کی فلموں کے پوسٹرز پھاڑ دیں ۔ اور انہیں ہولی کی آگ میں جلادیں۔

مزید :

کلچر -