یوگینڈا پاکستان کے ساتھ باہمی تجارت کو فروغ دینے میں گہری دلچسپی رکھتا ہے‘ڈاکٹر اسومان کینگی

یوگینڈا پاکستان کے ساتھ باہمی تجارت کو فروغ دینے میں گہری دلچسپی رکھتا ...

  

اسلام آباد ( نیٹ نیوز) پاکستان اور یوگینڈا کے درمیان تاریخی دوستانہ تعلقات قائم ہیں تاہم ضرورت اس بات کی ہے کہ دونوں ممالک تجارتی و اقتصادی تعلقات کو فروغ دینے کی کوشش کریں کیونکہ دونوں کی باہمی تجارت اصل صلاحیت سے بہت کم ہے جس کو بہتر کرنے کی وسیع گنجائش موجود ہے۔ ان خیالات کا اظہار یوگینڈا کے وزیر مملکت برائے خارجہ امور اور علاقائی تعاون کے انچارج ڈاکٹر اسومان کینگی نے اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری میں تاجر برادری سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔یوگینڈا کے سفیر ڈاکٹر محمد احمدکسولے اور یوگینڈا سفارتخانے کے سیکنڈ سیکرٹری کاوانیکا برائن فونکس اور پاکستان کی وزارت خارجہ کے ڈائریکٹر برائے افریکہ کے کے احسن واگن بھی وزیر مملکت کے ہمراہ تھے۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کی طرح یوگینڈا ایک زرعی ملک ہے جس کی 90فیصد زمین قابل کاشت ہے لہذا پاکستان اور یوگینڈا آبپاشی، مشینی کاشتکاری اور زرعی منصوعات کی ویلیو ایدیشن کیلئے ایک دوسرے سے تجربات اور مہارت کا تبادلہ کر کے فائدہ مند نتائج حاصل کر سکتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ یوگینڈا سرمایہ کاری کے عمدہ مواقع فراہم کرتا ہے اور مشرقی افریکی کمیونیٹی کی 20کروڑ آبادی کی بڑی مارکیٹ تک آسان رسائی فراہم کرتا ہے لہذا پاکستانی سرمایہ کار یوگینڈا میں توانائی، فوڈ پراسسنگ، فارماسوٹیکل، تیل و گیس اور معدنیات کی تلاش سمیت دیگر شعبوں میں سرمایہ کاری اور جائنٹ وینچرز قائم کرنے کی کوشش کریں۔ انہوں نے کہا کہ یوگینڈا اعلیٰ معیار کی چائے اور کافی پیدا کرتا ہے اور وہ براہ راست پاکستان کے ساتھ ان ایشیاء کی تجارت کرنا چاہتا ہے۔ انہوں نے یوگینڈا کو سفارت کاری، میڈیکل اور سائنسی تحقیق کے شعبوں میں تربیت فراہم کرنے کیلئے پاکستان کے کردار کو سراہا۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان کا نجی شعبہ لاہور یونیورسٹی کی قیادت میں یوگینڈا میں تعلیم کو فروغ دینے میں مصروف ہے۔ انہوں نے کہا کہ یوگینڈا کے صدر جناب یاوری موسوینی اس سال پاکستان کا دورہ کرنے کا ارادہ ررکھتے ہیں جس سے دونوں ممالک کے درمیان مختلف شعبوں میں تعلقات میں مزید بہتری پیدا ہوگی۔انہوں نے کہا کہ اسلام آباد چیمبر آف کامرس جائنٹ بزنس کونسل قائم کرنے کیلئے یوگینڈا چیمبر آف کامرس کے ساتھ باہمی یادداشت کے سمجھوتے پر دستخط کرے جس سے باہمی تجارتی و اقتصادی تعلقات کو بہتر کرنے میں نمایاں پیش رفت ہو گی۔انہوں نے کہا کہ آئی سی سی آئی اپنا ایک وفد یوگینڈا بھیجنے پر غور کرے تا کہ مشترکہ تعاون کی نئی راہیں تلاش کی جا سکیں۔اپنے استقبالیہ خطاب میں اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے صدر مزمل حسین صابری نے کہا کہ پاکستان کی موجودہ قیادت افریکہ کے ممالک کے ساتھ تجارت کو فروغ دینے میں خصوصی دلچسپی رکھتی ہے کیونکہ افریکہ ایک بڑی مارکیٹ کے طور پر ابھر رہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ یوگینڈا سے قریبی تعاون کو فروغ دے کر پاکستان ان مقاصد کو حاصل کرنے کی طرف بہتر پیش رفت کر سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان اور یوگینڈا کا باہمی تعاون دونوں ممالک کیلئے بہت مفید ثابت ہو سکتا ہے کیونکہ پاکستان یوگینڈا کو جنوبی اور مرکزی ایشیاء کی بڑی مارکیٹوں تک بہتر رسائی فراہم کر سکتا ہے جبکہ یوگینڈا پاکستان کو مشرقی افریکہ تک آسان رسائی فراہم کر سکتا ہے لہذا دونوں ممالک باہمی تعاون کی راہ میں حائل تمام رکاوٹیں دور کرنے کیلئے کوششیں تیز کریں۔ انہوں نے کہا کہ دونوں ممالک نجی شعبوں کو براہ راست روابط قائم کرنے میں سہولت فراہم کریں تا کہ تاجر برادری باہمی تجارت کے تمام ممکنہ مواقعوں سے فائدہ اٹھا سکے۔ انہوں نے کہا کہ اسلام آباد چیمبر آف کامرس اپنا ایک وفد یوگینڈا لے جانے کے امکانات پر غور کرے گا تا کہ وہاں موجود کاروباری مواقعوں سے استفادہ حاصل کرنے کیلئے کوششیں تیز کی جا سکیں۔اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے سینئر نائب صدر محمد شکیل منیر، نائب صدر محمد اشفاق چھٹہ ، ایف پی سی سی آئی کے سابق صدر زبیر احمد ملک، آئی سی سی آئی کے سابق صدور زاہد مقبول، میاں شوکت مسعود اور خالد اقبال ملک سمیت دیگر نے بھی اس موقع پر اپنے خیالات کا اظہار کیا اور دونوں ممالک کے درمیان باہمی تعلقات کو فروغ دینے کے بارے میں اپنی تجاویز پیش کیں۔

مزید :

کامرس -