بدھ رہنماءپر سرعام نوجوان خاتون کے ساتھ شرمناک حرکات کا الزام ، اصل کہانی کیا تھی ؟ پڑھ کر آپ بھی ہنسنے پر مجبور ہو جائیں گے

بدھ رہنماءپر سرعام نوجوان خاتون کے ساتھ شرمناک حرکات کا الزام ، اصل کہانی ...
بدھ رہنماءپر سرعام نوجوان خاتون کے ساتھ شرمناک حرکات کا الزام ، اصل کہانی کیا تھی ؟ پڑھ کر آپ بھی ہنسنے پر مجبور ہو جائیں گے

  

بنکاک (نیوز ڈیسک) تھائی لینڈ کے ایک عمر رسیدہ بدھ راہب کے بارے میں دوسرے راہبوں کی طرح مشہور تھا کہ وہ ہمیشہ سے دنیاوی لذتوں سے دور رہتے ہوئے مذہبی زندگی گزار رہے تھے مگر حال ہی میں ان صاحب کی ایک تصویر نے تہلکہ مچادیا جس میں یہ ایک نیم برہنہ لڑکی کو قابل اعتراض انداز میں چھوتے ہوئے نظر آرہے ہیں۔

یہ تصویر فیس بک پر سامنے آنے کے بعد دنیا بھر میں بدھ مت کے پیروکار اور راہب کے دیگر مداح سکتے میں آگئے اور اکثر نے تو ان پر شدید تنقید بلکہ لعن تعن بھی کی۔ لوگ اس بات پر حیرات تھے کہ دنیا میں عزت کی نگاہ سے دیکھے جانے والے راہب نے یہ کیسی حرکت کردی۔ یہ خبر عام ہونے کے بعد تصویر میں نظر آنے والی نوجوان لڑکی معمر راہب کے دفاع کے لئے سامنے آئی اور اس نے تصویر میں نظر آنے والے منظر کی وضاحت کی اور سننے والے ایک دفعہ پھر حیران رہ گئے۔

سعودی عرب میں نو جوان لڑکے کو اپنے لیے قبر کھودنا پڑ گئی کیونکہ۔۔۔

لڑکی نے اخبار ”مارننگ نیوز“ کو ایک انٹرویو میں بتایا کہ محترم راہب ایک پاکباز شخص ہیں اور وہ بالکل بے قصور ہیں۔ اس کا کہنا ہے کہ دراصل وہ لڑکی نہیں ہے بلکہ لڑکا ہے لیکن غالباً اس میں جنس کی تبدیلی کے سفر کا آغاز ہوچکا ہے مگر وہ تاحال خود کو لڑکا سمجھتی ہے۔ اس نے وضاحت کی کہ کمبوڈیا سے تعلق رکھنے والے راہب خصوصی دعائیہ تقریب میں شرکت کے لئے بینکاک تشریف لائے تھے اور اس دوران

انہوں نے پیروکاروں پر رحمتیں برسانے کے لئے خواتین کے ماتھوں پر خصوصی کلمات تحریر کئے جبکہ مردوں کے سینوں پر یہی کلمات تحریر کئے۔ وضاحت میں بتایا گیا ہے کہ چونکہ وہ خود کو لڑکا سمجھتی ہیں اس لئے راہب نے ان کے سینے پر دعائیہ کلمات تحریر کئے اور اس لئے وہ کسی خاتون کے جسم کو نہیں بلکہ مرد کے جسم کو چھورہے تھے جس میں قطعاً کوئی معیوب بات نہیں۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -