جی ایس ٹی بچانے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا، پاکستان ایڈورٹائزنگ ایسوسی ایشن

جی ایس ٹی بچانے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا، پاکستان ایڈورٹائزنگ ایسوسی ایشن

اسلام آباد ( خصوصی رپورٹ )پاکستان ایڈورٹائزنگ ایسوسی ایشن نے بعض اخبارات میں چھپنے والی اس خبر کی جانب توجہ دلائی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ بعض ایڈورٹائزنگ ایجنسیاں وفاقی یا صوبائی حکومتوں کو واجب الادا جنرل سیلز ٹیکس بچانے میں ملوث ہیں ۔ اس حوالے سے وضاحتی بیان میں کہا گیا ہے کہ ایڈورٹائزنگ ایجنسیوں کی نمائندہ تنظیم ہونے کے ناطے پاکستان ایڈورٹائزنگ ایسوسی ایشن یہ وضاحت کرنا چاہتی ہے کہ جہاں پر حکومتی بزنس ملوث ہو جنرل سیلز ٹیکس اکٹھا کرنااور اس کی ادائیگی متعلقہ محکموں کی ذمہ داری ہے ۔ایڈورٹائزنگ ایجنسیاں محض سروس فراہم کرنے کا ادارہ ہیں ، وہ سرکاری خزانے میں جنرل سیلز ٹیکس جمع کرانے کی ذمہ دار نہیں۔عمومی طور پر سرکاری محکمے جی ایس ٹی منہا کرکے ایجنسیوں کو ادائیگی کرتے ہیں ۔ ایجنسیاں حکومتی ریٹس کے مطابق سرکاری محکموں سے وصولی کے بعداپنا کمشن کاٹ کر باقی رقم میڈیا آؤٹ لیٹس یا وینڈرز کو منتقل کر دیتی ہیں ۔اس طرح سے ایجنسیوں کی طرف سے ٹیکس بچانے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا۔ایڈورٹائزنگ ایجنسیوں کا نمائندہ ہونے کے ناطے پاکستان ایڈورٹائزنگ ایسوسی ایشن دیانتدارانہ بزنس کی بھرپور حمایت کرتی ہے اور متعلقہ ٹیکس حکام سے مطالبہ کرتی ہے کہ وہ رکن ایجنسیوں کو اس حوالے سے ہراساں کرنا بند کر دے۔

مزید : صفحہ آخر