چارسدہ ،جماعت اسلامی کا فاٹا کو خیبر پختونخوا میں ضم کرنے کا مطالبہ

چارسدہ ،جماعت اسلامی کا فاٹا کو خیبر پختونخوا میں ضم کرنے کا مطالبہ

چارسدہ( بیورو رپورٹ)جماعت اسلامی نے فاٹا کو فوری طور پر خیبر پختونخوا میں ضم کرنے ، بڑا مالیاتی پیکج دینے ، ہر ایجنسی میں یونیورسٹی اور میڈیکل کالج کے قیام کا مطالبہ کر دیا ۔ سی پیک کو بھی تمام قبائلی علاقوں سے منسلک کرنے کا مطالبہ ۔تفصیلات کے مطابق جماعت اسلامی کے ضلعی امیر محمد ریاض خان ، جنرل سیکرٹری سیف اللہ خان درانی ،سابق ایم پی اے محمد ارشد خان ،سابق امیر ضلع مصباح اللہ،ولی محمد خان ،مولانا اکبر علی عابد ،مولانا عبد المستعان اور مولانا مفتی جاوید اقبال نے مرکزی اسلامی میں ماہانہ تربیتی اجتماع کے بعد ہنگامی پریس کانفرنس سے خطاب کر تے ہوئے کہا کہ بعض سیاسی پارٹیاں پختونوں اور سندھیوں کو لڑا کر سیاسی دکان چمکارہے ہیں جس کا فائدہ دشمنوں کو ہو رہا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ پاکستان کو غیر مستحکم کرنے کی تمام کو ششیں ناکام بنائی جائیگی اور جماعت اسلامی قوم پرست پارٹیوں کو نان ایشوز پر سیاست چمکانے کی کسی صورت اجازت نہیں دے گی ۔ انہوں نے کہاکہ سقوط ڈھاکہ کے زحم ابھی مندمل نہیں ہو ئے کہ بعض قوتیں ملک کے خلاف سازشوں میں مصروف ہو چکے ہیں۔ انہوں نے سانحہ تنگی میں ملوث افراد کو کیفرکردار تک پہنچانے اور سہولت کاروں کو عبرت ناک سزا دینے کا مطالبہ کیا ۔ انہوں نے کہا کہ امن وآمان قائم کرنا حکومت کی ذمہ داری ہے مگر عوام کی بھی ذمہ داری بنتی ہے کہ موجودہ گھمبیر حالات میں حکومت سے تعاون کریں۔ انہوں نے سرچ اپریشن کے نام پر شرفاء کی بے عزتی اور چادر اور چاردیواری کا تقدس پامال کرنے پر شدید تنقید کی اور مطالبہ کیا کہ سیکورٹی ایجنسیاں پختون روایات کا خیال رکھے اور بغیر کسی ثبوت کے لوگوں کو تنگ نہ کر یں۔

مزید : پشاورصفحہ آخر