تحفظ ختم نبوت کے امیر حاجی کلیم اللہ کے قتل میں ملوث 3ملزمان گرفتار

تحفظ ختم نبوت کے امیر حاجی کلیم اللہ کے قتل میں ملوث 3ملزمان گرفتار

چارسدہ (بیورو رپورٹ) تحفظ ختم نبوت کے امیر حاجی کلیم اللہ کے قتل میں ملوث تین ملزمان ڈرامائی انداز میں گرفتار۔ تینوں ملزمان آپس میں سگے بھائی ہیں ۔ گرفتار ملزمان مقتول کلیم اللہ کے دو کروڑ روپے ہڑپ کرنے کے درپے تھے ۔ ڈی ایس پی چارسدہ ۔ تفصیلات کے مطابق ڈی ایس پی چارسدہ نذیر خان نے تھانہ پڑانگ میں ایس ایچ او گل شید خان ، انسپکٹر امیر نوا ز خان ، اے ایس آئی مرجان علی اور دیگر پولیس افسران کے ہمراہ ہنگامی پریس کانفرنس سے خطاب کر تے ہوئے کہا کہ 19فروری کو چارسدہ ٹاؤن میں قتل ہونے والے تحفظ ختم نبوت کے امیر حاجی کلیم اللہ کے قاتلوں کو گرفتار کرکے ان سے آلہ قتل بھی برآمد کیا گیا ہے ۔ ڈی ایس پی چارسدہ نذیر خان نے مزید کہاکہ قتل میں ملوث تینوں ملزمان آپس میں سگے بھائی ہیں جبکہ ان کے چوتھے ساتھی کی گرفتار ی کیلئے چھاپے لگا ئے جا رہے ہیں ۔ انہوں نے کہاکہ گرفتار ملزمان اعجاز ، اسفندیار اور بدیع الزمان پسران قمر زمان ساکنان قائد آباد چارسدہ کا مقتول کلیم اللہ سے دو کروڑ روپے کا لین دین تھا اور ملزمان حاجی کلیم اللہ کے پیسے ہڑپ کرنا چاہتے تھے اس لئے انہوں نے حاجی کلیم اللہ کو راستے سے ہٹانے کا منصوبہ بنایا ۔ انہوں نے کہاکہ آلہ قتل برآمد ہو چکا ہے اور جرم میں شریک دیگر ملزمان کو بھی عنقریب قانون کے کٹہرے میں لایا جائیگا۔ ڈی پی او چارسدہ نے غیر معمولی کارکردگی اور اندھے قتل کیس کا سراغ لگانے والے پولیس ٹیم کو نقد انعامات اور توصیفی سرٹفیکیٹ دینے کا اعلان کیا ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر