حویلیاں میں پولیس کی انتھک محنت رنگ لے آئی

حویلیاں میں پولیس کی انتھک محنت رنگ لے آئی

حویلیاں (نامہ نگار) تھانہ حویلیاں کی انتھک محنت رنگ لے آئی کھوکھر میرا میں ڈیڑھ ماہ قبل قتل ہونے والے خاوند بیوی کے ملزمان کراچی سے گرفتار ڈی ایس ،پی سرکل حویلیاں کیڈٹ خورشید ،ایس ،ایچ ،او ملک پر ویز اور یونس خان کی اعلی کارکردگی پر اہلیان علاقہ کا خراج تحسین مقتولین کے ورثاء کا ملزمان کو سرعام پھانسی کا مطالبہ کر دیا ملزمان خاور اور امجد نے کچھ دن قبل لاپتہ ہونے والے کھوکھر میرا کے رہائشی ندیم اور بلال کی نعشیں بھی بانڈہ صاحب خان کھٹہ سے برآمد کراوائیں تفصیلات کے مطابق گزشتہ 65 دن قبل تھانہ حویلیاں کی حدود کھوکھر میرا میں قتل ہونے والے رمضان اور اسکی بیوی مسماۃ (ن) کو انکے گھر میں گھس کر قتل کر دیا تھا جسکے بعد ملزمان فرار ہو گئے تھے جسکے بعدمقتول کے رشتہ داروں ندیم اور بلال نامی اشخاص کو مذکورہ قاتلوں نے بہلا پھسلا کر گھر سے دور جا کر بانڈہ صاحب خان موٹر وے کے قریب جا کر قتل کر دیا قریبی مٹی کے ڈھیر میں ان کی نعشیں دفن کر دیں جسکے بعد قاتل خاور اور امجد کراچی جا کر روپوش ہو گئے تھے مقتول رمضان اور اسکی بیوی کے ورثاہ اور وقوعہ کی عینی شاہد ان کی بیٹی مسماۃ (ش) نے ان ہی دو ملزمان کو رپورٹ میں نامزد بھی کیا تھا جس کے بعد سرکل ڈی ایس پی کیڈٹ خورشید تنولی اور ایس،ایچ،او ملک پرویز نے تھانہ حویلیاں کے اندر تعینات تفتیشی سٹاف کے انچارج انسپکٹر یونس خان کی سربراہی میں متعلقہ گرہو کو پکڑنے کے لئے ٹیم تشکیل دی جنھوں نے وقوعہ کے ٹھیک 65 دنوں کے اندر انتہائی شاطر انداز سے ملزمان کو ٹریس کر کے کراچی سے گرفتار کر لیا اور گزشتہ دن تھانہ حویلیاں میں پابند سلاسل کیا پولیس کے مطابق مزکورہ ملزمان نے کچھ عرصہ قبل مسلم آباد میں قتل ہونے والی لیڈی کونسلر کے قتل اور حویلیاں گاؤں میں ہونے والی سابقہ چیف سیکیریٹری خالد پرویز کی ڈکیتی میں بھی ملوث و نامزد تھے پولیس کو دوران تفتیش مقتول رمضان اور اسکی بیوی اور انکے بعد دو نوجوان ندیم اور بلال کو قیتل کرنے کی تمام روداد سنا نے کے بعد انھیں قتل کر کے دفن کرنے کی جگہ کی نشاندہی بھی کروائی اس دوران میڈیا ،ہیومن رائیٹس ہزارہ ڈویثرن کی ٹیم اور مقامی لوگوں کی کثیر تعداد تھی جنھوں نے بروقت کاروائی کر کے ملزمان کو گرفتار کیا

مزید : پشاورصفحہ آخر