پاک ترک سکول کے طلباءکاسکول نیٹ ورک کا انتظام ’معارف‘ فاﺅنڈیشن کے حوالے کرنے پر احتجاج کا اعلان

پاک ترک سکول کے طلباءکاسکول نیٹ ورک کا انتظام ’معارف‘ فاﺅنڈیشن کے حوالے ...
پاک ترک سکول کے طلباءکاسکول نیٹ ورک کا انتظام ’معارف‘ فاﺅنڈیشن کے حوالے کرنے پر احتجاج کا اعلان

  

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن)پاکستان میں پاک ترک سکول کے طلباءنے سکول نیٹ ورک کا انتظام ترکی کے ایک گروپ کی ’معارف ‘نامی فاﺅنڈیشن کے حوالے کرنے پر احتجاج کرنے کا اعلان کیا ہے۔تفصیلات کے مطابق ترکی میں بغاوت کی ناکامی کے بعد فتح اللہ گولن کے پاک ترک سکولز کو پاکستان میں بند کرنے کا اعلان کیا گیا تھااور ان سکولوں کی انتظامیہ کو بدلنے کا فیصلہ کیا گیا تھا۔

پی ایس ایل فائنل،کوئٹہ گلیڈی ایٹرز نے 5 غیر ملکی کھلاڑیوں کو فائنل کرلیا

میڈیا رپورٹس کے مطابق پاک ترک سکولز کے گریجوایٹس طلباءنے سکول نیٹ ورک کو پرانی انتظامیہ سے لیکر نئی ترکی کی’معارف‘فاﺅنڈیشن کے حوالے کرنے کے فیصلے کو ماننے سے انکار کرتے ہوئے احتجاج کرنے کا اعلان کیا ہے۔طلباءکا کہنا تھا کہ ’معارف ‘فاﺅنڈیشن البانیہ میں طلباءکے ساتھ جسمانی زیادتی میں ملوث رہی ہے اور ساتھ ہی غیر معقول ڈگریوں اور انگریزی زبان ٹھیک سے نہ پڑھانے میں بھی پیش پیش رہی ہے۔

پاک ترک سکولز کے گریجوایٹس نے حکومت سے درخواست کرتے ہوئے کہا کہ ”ترک اساتذہ کو پاکستان میں رہنے کی اجازت دی جائے اور ’معارف‘ کو ہمارے سکولز کا انتظام سنبھالنے سے روکا جائے۔انہوں نے کہا کہ اگر ایسا نہ کیا گیا تو آئندہ کوئی بھی این جی او اس ڈر کے ساتھ کے ہمارے سٹاف کو کسی بھی متنازعہ گروپ کی وجہ سے ملک سے باہر نکال دیا جائے گا کی وجہ سے کام کرنے میں دلچسپی نہیں لیں گی ،یہ وقت کی ضرورت ہے کہ اس فیصلے پر نظر ثانی کی جائے اور پاک ترک سکولز کے اساتذہ کو ملک بد ر نہ کیا جائے“۔مزید برآں میڈیا رپورٹس کے مطابق پنجاب پولیس کے آئی جی اور سی ٹی ڈی کی طرف سے پاک ترک ایجوکیشن فاﺅنڈیشن کے چیئرمین کو بورڈ آف ڈائریکٹرز کے عہدے سے استعفے کیلئے دھمکیاں بھی دی گئی ۔

مزید :

کراچی -