معاشرے کے تمام طبقات کو یکساں اہمیت دی جائے، گورنر پنجاب

معاشرے کے تمام طبقات کو یکساں اہمیت دی جائے، گورنر پنجاب

لاہور (کامرس رپورٹر)خصوصی افراد ملک کے لیے انتہائی قیمتی اثاثہ ثابت ہوسکتے ہیں لہذا ان کی بحالی کے لیے کردار ادا کرنا ہر ایک کا فرض ہے۔ان خیالات کا اظہار گورنر پنجاب محمد رفیق رجوانہ، لاہور چیمبر کے صدر ملک طاہر جاوید، سینئر نائب صدر خواجہ خاور رشید، نائب صدر ذیشان خلیل ، لبارڈ کے سیکریٹری جنرل سعید خان ، احمر ملک ، میاں نصرت الدین و دیگر افراد نے لبارڈ فنڈ ریزنگ ڈنر کے موقع پر کیا۔ گورنر پنجاب محمد رفیق رجوانہ نے کہا کہ بہترین مستقبل ان ہی اقوام کا حق ہوتا ہے جو معاشرے کے تمام طبقات کو یکساں اہمیت دیتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ خصوصی افراد ملک کا سرمایہ اور ملک کی ترقی وخوشحالی کے لیے بہترین کردار کرنے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔ لاہور چیمبر کے صدر ملک طاہر جاوید نے کہا کہ پاکستان میں خصوصی افراد کو کسی صورت بھی نظر انداز نہیں ہونا چاہیے، انہو ں نے کہا کہ اگرچہ ترقی یافتہ ممالک کی نسبت پاکستان میں خصوصی افراد کو زیادہ مشکات کا سامنا ہے لیکن یہ بات تسلی بخش ہے کہ لبارڈ جیسا ادارہ انہیں تعلیم و تربیت اور ہنر سکھانے جیسی اہم سہولیات بلامعاوضہ مہیا کررہا ہے۔ انہوں نے کہا یہ دیکھ کر بڑی خوشی ہوتی ہے کہ 1996ء میں لاہور چیمبر آف کامرس نے معذور افراد کی بحالی کے لیے ایک چھوٹا سا سیل قائم کرکے جو ننھا سا پودا لگایا تھا وہ پھل پھول کر آج لبارڈ کی صورت میں ایک تن آور درخت کا روپ دھار چکا ہے جس کے لیے لبارڈ کے لیے خدمات سرانجام دینے والے تمام افراد تحسین کے مستحق ہیں۔ انہوں نے ملک میں موجود معذور افراد کا تازہ ترین مکمل ڈیٹا اکٹھا کرنے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ اِس کے بغیر ملک میں موجود تمام معذور افراد کی بحالی کے لیے کام کرنا ممکن نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ ڈیٹا اکٹھا کرنے سے معذوری کی اقسام اور بحالی پر اْٹھنے والے اخراجات کے متعلق تفصیلات حاصل ہونگی جن کی بدولت موثر حکمتِ عملی ترتیب دینا ممکن ہوگا۔ انہوں نے معذور افراد میں احساسِ کمتری ختم کرنے اور کامیاب زندگی گزارنے کا جوش و جذبہ بیدار کرنے کے سلسلے میں لبارڈ کی کاوشوں کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ ان کاوشوں کے انتہائی مثبت نتائج برآمد ہونگے۔

محمد سعید خان نے ڈنر کے شرکاء کو لبارڈ کے اغراض و مقاصد سے آگاہ کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ لبارڈ کا بنیادی مقصد معذور افراد کو یہ احساس دلانا ہے کہ اعضائے رئیسہ کی کمی یا کسی اور معذوری کے باوجود وہ اْن تمام کاموں کو سرانجام دے سکتے ہیں جوکہ کوئی صحتمند شخص سرانجام دے سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ لبارڈ سے خدمات کے عوض کوئی معاوضہ نہیں لیا جاتا۔

مزید : کامرس