حلقہ بندیاں تبدیل ہوئیں تو معاملہ سپریم کورٹ میں جائیگا ، سر دار آصف

حلقہ بندیاں تبدیل ہوئیں تو معاملہ سپریم کورٹ میں جائیگا ، سر دار آصف

کھڈیاں خاص (این این آئی) حلقوں میں ردوبدل نہیں ہوئی ہر کوئی اپنی اپنی خواہشات کے مطابق آئندہ ہونے والے عام انتخابات کیلئے حلقہ بندیاں کرنے میں مصروف ہیں۔ ان خیالات کا اظہار پی ٹی آئی کے مرکزی راہنما سردار آصف احمد علی نے ’’این این آئی ‘‘سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ1971 سے 2002تک تقریبا آٹھ قومی انتخابات پرانی حلقہ بندیوں کے مطابق ضلع قصور میں ہوئے اس لیے مجھے یقین ہے صوبوں کی خواہشات کے مطابق ملک بھر میں حلقہ بندیوں میں تبدیلی نہیں ہو گی اگر ایسا ہوا تو معاملہ سپریم کورٹ میں چلا جائے گا اس لیے الیکشن کمیشن کے پاس پرانی حلقہ بندی کے مطابق انتخابات کروانے کے علاوہ اور کوئی راستہ نہ ہے میرے مخالفین کھائی ہٹھاڑ میں بیٹھ کر کوئی فتح پور اور کوئی شہباز روڈ میں اس سلسلہ میں خیالی پلاؤ پکانے میں مگن ہے حالانکہ خواہشات اور حقیت کے درمیان ایک بہت بڑی خلیج حائل ہوتی ہے ۔سابق وزیر خارجہ نے بتایا کہ ابھی دو روز پہلے الیکشن کمیشن نے تمام اپوزیشن سیاسی جماعتوں کو مد عو کرکے بریفنگ دی ہے کہ وہ کوئی ایسا قدم نہیں اٹھائے گا جس سے کسی سیاسی جماعت یا گروہ کی دلچسپی پامال ہو، انہوں نے مزید کہا کہ الیکشن کمیشن کسی حکمران کے ماتحت نہیں بلکہ آئین پاکستان کے تابع ہے دوسرا کہ مجھے چیف الیکشن کمشنر پر پورایقین ہے کہ وہ آزادانہ اور منصفانہ انتخابات مقررہ وقت پر کروانے کے لیے ہر ممکن قدم اٹھائیں گے۔

سردار آصف

مزید : پشاورصفحہ آخر