فوڈ اتھارٹی ٹیموں کی کارروائی‘ ناقص اشیاء کی تیاری پر 2 یونٹس سیل 

فوڈ اتھارٹی ٹیموں کی کارروائی‘ ناقص اشیاء کی تیاری پر 2 یونٹس سیل 

  

ڈیرہ غازیخان‘ مظفر گڑھ(سٹی رپورٹر‘ نامہ نگار) غیر معیاری خوراک کی تیاری پر پنجاب فوڈ اتھارٹی کے آپریشنز جاری۔قوانین کی خلاف ورزیوں پر 2 فوڈ پوائنٹس سیل، خوراک کا معیار بہتر نہ ہونے پر متعدد فوڈیونٹس کو 134,500 روپے کے جرمانے عائد، 107 کلو مصالحے، 50 لٹر بیورجز، 70 لٹر ملاوٹی دودھ تلف، 198 شاپس مالکان کو وارننگ نوٹسز جاری ڈائریکٹر جنرل پنجاب فوڈ اتھارٹی رفاقت علی نسوآنہ کی ہدایت پر فوڈ سیفٹی ٹیموں نے جنوبی پنجاب میں مضر(بقیہ نمبر41صفحہ 6پر)

 صحت خوراک تیار کرنے والوں کے خلاف کارروائیاں تیز کردی ہیں۔ فوڈ سیفٹی ٹیموں نے 243 فوڈ یونٹس کی چیکنگ کے دوران خوراک میں ملاوٹ کرنے پر 2 فوڈ یونٹس سیل جبکہ 176 فوڈ بزنس مالکان کو بہتری نوٹسز جاری کیے۔ مظفرگڑھ کے علاقے جتوئی  میں کھوئے کی تیاری میں ملاوٹی دودھ کے استعمال پر خالد کھویا یونٹ کو سیل کر دیا گیا۔ مزید کھوئے میں استعمال ہونے والے دودھ میں مکھیاں پائی گئیں۔ اس کے علاوہ بہاولنگر کے علاقے منچن آباد میں رفیق کھویا یونٹ کو کھوئے کی تیاری میں بناسپتی گھی کی ملاوٹ کرنے پر سربمہر کیا گیا۔کاروائی کے دوران 30 کلو ملاوٹی کھویا اور 8 کلو بناسپتی گھی برآمد کر لیا گیا۔ مزید مظفر گڑھ میں امتیاز کریانہ سٹور کو زائدالمعیاد بسکٹس بیچنے پر 12 ہزار، لاثانی چرغہ ہاؤس کو ملاوٹی مرچیں استعمال کرنے پر 15 ہزار،  بہاولنگر میں یاسر ملک شاپ کو غیر معیاری دودھ فروخت کرنے اور لیہ میں اسلم کریانہ سٹور کو ایکسپائرڈ اشیاء کی فروخت کرنے پر یکساں 10، 10 ہزار روپے کے جرمانے عائد کیے گئے۔ مزید برآں رحیم یارخان میں علی کریانہ سٹور کو صفائی کے ناقص انتظامات پر 12 ہزار، بہاولنگر میں ڈیسنٹ سویٹس اینڈ بیکرز آؤٹ لیٹ کو ایکسپائرڈ ڈرنک فروخت کرنے جبکہ راجن پور میں اسماعیل کریانہ سٹور کو ملاوٹی مرچیں فروخت کرنے پر یکساں 10،10 ہزار روپے کے جرمانے عائد کیے گئے۔ مجموعی طور پر کی گئی کارروائیوں کے دوران 107 کلو کھلے، ملاوٹی مصالحے، 70 لٹر غیر معیاری دودھ اور 50 لٹر مشروبات تلف کردی گئیں۔

یونٹ سیل

مزید :

ملتان صفحہ آخر -