بااثر افراد کی سرکاری رقبہ پر قبضہ کی کوشش منع کرنے پر بزرگ پر تشدد‘ داڑھی کے بال  نوچ ڈالے‘ پولیس کارروائی سے گریزاں 

بااثر افراد کی سرکاری رقبہ پر قبضہ کی کوشش منع کرنے پر بزرگ پر تشدد‘ داڑھی کے ...

  

 پکھی موڑ (نامہ نگار) سرکاری رقبے پر قبضہ سے منع کرنے پر بااثر افراد کا باریش بزرگ پر تشدد داڑھی کو   نوچا اور بال(بقیہ نمبر53صفحہ 6پر)

 اکھاڑ دیے متاثرہ حاجی فقیر محمد انصاری سکنہ 571 ای بی نے 15-02-2021  کو تھانہ ماچھیوال میں درخواست گزاری کہ میرے گھر کے قریب تقریبا 2 کنال سرکاری رقبہ سیوریج کے پانی کے لئے مختص ہے جس میں میرے گھر اور دیگر گھروں کا سیوریج کا پانی جاتا ہے 15-02-2021 بوقت شام پانچ بجے الزام علیہ اللہ رکھا نے بذریعہ ٹریکٹر کرا سیوریج والی جگہ پرمٹی ڈلوانا شروع کر دی سائل کے منع کرنے پر اللہ رکھا طیش میں آ گیا اور مجھے داڑھی سے پکڑ لیا اور جھٹکا دے کر سائل کو زمین پر گرا لیا اور اپنے دونوں ہاتھوں سے سائل کی داڑھی اکھاڑنا شروع کر دی میری چیخ و پکار پر سلامت علی ولد محمد بشیر میرے بھائی محمد جمیل اور دیگر  آگئے جنہوں نے الزام علیہ سے نہ صرف میری جان بخشی کروائی بلکہ داڑھی کے الزام علیہ اللہ رکھا داڑھی کے بال پھینک کر فرار ہو گیا اللہ رکھا مجھے سنگین نتائج کی دھمکیاں بھی دیتا رہا تھانہ ماچھیوال کو دی گئی درخواست کو پندرہ دن گزرنے کے باوجود پولیس تھانہ ماچھیوال نے کوئی کاروائی نہ کی متاثرہ فقیر محمد نے ایڈیشنل آئی جی جنوبی پنجاب ملک ظفر اقبال اعوان ڈی پی او وہاڑی زاہد نواز خان مروت  سے انصاف فراہم کرنے کی اپیل کی۔

گریزاں 

مزید :

ملتان صفحہ آخر -