گلستان حیات

گلستان حیات
گلستان حیات

  

ازقلم: سحر نصیر (سیالکوٹ)

میں نے اپنے ظرف کو دیکھا

 لوگوں کے الزامات کو نہیں

میں نے اپنی ہمت کو دیکھا

لوگوں کے طعنوں کو نہیں

میں نے اپنی جستجو کو دیکھا

لوگوں کے حسد کونہیں

میں نے اپنی تسکین کو دیکھا 

لوگوں کی مسکراہٹ کونہیں

میں نے اپنے اخلاق کو دیکھا

لوگوں کے رویوں کو نہیں

میں نے اپنی بزم یاراں کو دیکھا

لوگوں کے سفاک چہروں کو نہیں۔

میں نے اپنی اداسی کو دیکھا

لوگوں کی سنگدلی کو نہیں 

میں نے اپنے گردش ایام کو دیکھا

لوگوں کی خوشحالی کو نہیں

میں نے اپنی بری عادات کو دیکھا

لوگوں کی خامیوں کو نہیں

"سحر" نے اپنے گلستان حیات کودیکھا

اللّٰہ کے حضور سجدہ شکر کیا

مزید :

شاعری -سنجیدہ شاعری -