ایک گھر میں پانی پینے گئی پیاسی لڑکی غائب ہوگئی,   جب پولیس نے چھان بین کی تو ایسا انکشاف کہ ہرکوئی کانوں کو ہاتھ لگانے پر مجبور

ایک گھر میں پانی پینے گئی پیاسی لڑکی غائب ہوگئی,   جب پولیس نے چھان بین کی تو ...
ایک گھر میں پانی پینے گئی پیاسی لڑکی غائب ہوگئی,   جب پولیس نے چھان بین کی تو ایسا انکشاف کہ ہرکوئی کانوں کو ہاتھ لگانے پر مجبور

  

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) بھارت میں پیاس لگنے پر پانی پینے کے لیے ایک گھر میں جانے والی لڑکی جنسی زیادتی کے بعد موت کے گھاٹ اتار دی گئی اور مقتولہ کو دفن کرکے ملزم گھر کوتالا لگا کر فرار ہوگیا ۔

 ٹائمز آف انڈیا کے مطابق یہ انسانیت سوز واردات بھارتی ریاست اترپردیش کے ضلع بلند شہر میں ہوئی۔ 14سالہ مقتول لڑکی اپنی ماں اور بہن کے ساتھ کھیتوں میں کام کر رہی تھی جب اسے شدید پیاس لگی۔ وہ قریب واقع ایک گھر میں پانی پینے کے لیے گئی جہاں موجودایک جنسی درندے نے اسے جنسی زیادتی کا نشانہ بنانے کے بعد گلہ گھونٹ کر مارڈالا۔

رپورٹ کے مطابق 22سالہ ملزم کا نام ہریندر بتایا گیا ہے۔ لڑکی کی گمشدگی کی رپورٹ درج ہونے پر پانچ دن بعد جب پولیس ہریندر سے پوچھ گچھ کرنے اس کے گھر گئی تو گھر کو تالہ لگا ہوا تھا۔ پولیس دیوار پھلانگ کر گھر میں داخل ہو گئی جہاں صحن میں دیوار کے ساتھ ایک جگہ انہیں نرم مٹی دیکھ کر شبہ ہوا۔ جب انہوں نے وہاں کھدائی کی تو مقتول لڑکی کی برہنہ لاش برآمد ہوگئی۔پولیس نے قاتل کو شملہ سے گرفتار کر لیا، جس نے دوران تفتیش اپنے جرم کا اعتراف کر لیا ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -