ایران سے مختلف مصنوعات کی اسمگلنگ میں 60فیصد تک کمی

ایران سے مختلف مصنوعات کی اسمگلنگ میں 60فیصد تک کمی

  

کراچی( آن لائن)کاروباری برادری نے اسمگلنگ کے خلاف جاری کسٹمز انٹیلی جنس کی مہم کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس کے نتیجے میں اسمگلنگ میں نمایاں کمی دیکھنے میں آئی ہے۔ قانونی کاروبار کرنے والوں کی حوصلہ افزائی ہوئی ہے۔ ملکی معیشت پر اس کے مثبت اثرات مرتب ہونگے۔ میڈیارپورٹ کے مطابق کسٹمز انٹیلی جنس کی جانب سے ایران سے اسمگل ہونیوالی مصنوعات کیمیکل ویکس ، پیٹرولیم مصنوعات، ایل پی جی اور پلاسٹک دانہ کیخلاف جاری کسٹمز انٹیلی جنس کی مہم کے نتیجے میں اسمگلنگ میں تقریباً50سے 60فیصد تک کی نمایاں کمی دیکھنے میں آئی ہے۔ ویکس ایسوسی ایشن نے اس سلسلے میں ڈی جی کسٹمز انٹیلی جنس کو خط لکھا ہے جس میں اسمگلنگ کیخلاف کارروائی اور گزشتہ دنوں اسمگل کردہ ویکس کے ٹرک پکڑے جانے کا خیر مقدم کرتے ہوئے کسٹمز انٹیلی جنس کی کارکردگی کو سراہا ہے۔ کیمیکل ایسوسی ایشن نے اسمگلنگ کیخلاف مہم کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس کے یقیناً مثبت اثرات سامنے آرہے ہیں۔ ذرائع کے مطابق آئل مارکیٹنگ کمپنیوں نے چیئرمین ایف بی آر کو اس مہم کے مثبت اثرات سے آگاہ کیا ہے۔ کاروباری برادری کا کہنا ہے کہ اگر یہ سلسلہ چلتا رہے تو یقیناً اس سے حکومت کے ریونیو میں بھی اضافہ ہوگا۔ قانونی کاروبارکرنے والوں کے کاروبار میں اضافہ ہوگا جس کے معیشت پر مثبت اثرات مرتب ہونگے۔ مقامی کپڑا تیار کرنیوالوں نے بھی کسٹمز انٹیلی جنس کے اقدامات کو سراہتے ہوئے کہا ہے کہ اس مہم سے اسمگلرز روپوش ہوگئے ہیں۔

، اب ضرورت اس بات کی ہے کہ مہم مسلسل جاری رہے۔دریں اثناء کسٹمز انٹیلی جنس کراچی نے گذشتہ روز ایک کامیاب کارروائی میں لاکھوں روپے مالیت کی اسکریپ شیٹ ضبط کرلی، یہ اسکریپ شیٹ ایران کے راستے کراچی اسمگل کی جارہی تھیں۔ کسٹمز ذرائع کا کہنا ہے کہ اسکریپ شیٹ بلٹ پروف گاڑیاں بنانے کیلئے استعمال ہوتی ہے۔ کسٹمز انٹیلی جنس کی اے ایس او ٹیم نے ڈی جی کی ہدایت پر سپرہائی وے سے 2بڑے ٹرک پکڑے جن پر اوپر پی وی سی اسکریپ جبکہ نیچے اسٹیل شیٹس تھیں۔ اسمگلرز انہیں شیرشاہ لیجارہے تھے کسٹمز انٹیلی جنس ٹیم ذرائع کا کہنا ہے کہ اسمگلرز کی گاڑیوں کے آگے چلنے والے ایک پائلٹ کو جو ٹویوٹا گاڑی میں سوار تھا ، کو گرفتار کرلیا ہے۔

مزید :

کامرس -