نقل روکنے کی کوشش الٹ پڑ گئی

نقل روکنے کی کوشش الٹ پڑ گئی
نقل روکنے کی کوشش الٹ پڑ گئی
کیپشن: cheating

  

لندن (نیوز ڈیسک) آپ نے اپنی تعلیمی زندگی میں طالب علموں کو امتحانات کے دوران نقل سے روکنے کے لئے طرح طرح کے طریقے آزماتے دیکھا ہوگا تاہم ایک برطانوی یونیورسٹی کی تدبیر الٹی پڑ گئی اور وہ نقل روکنے کی بجائے اس کا ذریعہ بن گئی۔ ’’پلائے ماؤتھ یونیورسٹی‘‘ نے طالب علموں کو نقل بازی سے روکنے کے لئے کمرہ امتحانات سمیت یونیورسٹی میں جگہ جگہ بڑے بڑے پوسٹرز چسپاں کئے۔ ان پر بڑا بڑا ’’نو چٹنگ‘‘ لکھا گیا تھا لیکن دلچسپ بات یہ ہے کہ اس میں ایک ہاتھ دکھایا گیا ہے جس پر طالب علم نے حساب کے فارمولے لک رکھے ہیں اور اس پر یونیورسٹی کی جانب سے ممنوع کا سائن لگایا گیا ہے۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ اس ہاتھ پر لکھے ہوئے فارمولے اصل ہیں اور سٹوڈنٹس کا کہنا ہے کہ امتحانات کے دوران یہ پوسٹرز بے حد سودمند ثابت ہوئے کئی طالب علموں کے مطابق تو ماضی کے مقابلے ان فارمولوں کے باعث ایک گریڈ بہتر حاصل کرلیا ہے۔ سٹوڈنٹ ویب سائٹ پر نشاندہی کے بعد انتظامیہ نے پوسٹرز پھاڑ دئیے لیکن اب یہ خبر عالمی اخبارات تک پہنچ چکی ہے اور یونیورسٹی کو کافی شرمندگی اٹھانی پڑی ہے۔

مزید :

تعلیم و صحت -