بدین ،ذوالفقار مرزا کا ساتھیوں کے ہمراہ ماڈل پولیس سٹیشن پر دھاوا ،توڑ پھوڑ

بدین ،ذوالفقار مرزا کا ساتھیوں کے ہمراہ ماڈل پولیس سٹیشن پر دھاوا ،توڑ پھوڑ

  

بدین(اے این این،آ ن لا ئن ، آ ئی این پی ،ما نیٹرنگ ڈ یسک ) ساتھی کے خلاف مقدمہ درج کرنے پر سابق صوبائی وزیر داخلہ ذوالفقار مرزا نے ساتھیوں کے ہمراہ ماڈل پولیس اسٹیشن پر دھاوا بول دیا اور توڑ پھوڑ کی۔ تفصیلات کے مطابق ذوالفقار مرزا اپنے ایک ساتھی ندیم مغل کے خلاف مقدمہ درج کرنے پر اپنے ساتھیوں کے ہمراہ ماڈل پولیس اسٹیشن بدین پہنچ گئے اور تھانے میں موجود پولیس افسر سے بدتمیزی کرتے ہوئے میز کا شیشہ توڑا اور پولیس افسر کا موبائل اٹھا کر دیوار پردے مارا۔ ذوالفقارمرزا نے اپنے ساتھی کے خلاف مقدمہ درج کرانے والے تاجروں کی دکانوں پر بھی تالے لگادیئے۔ ذوالفقار مرزا نے کہا کہ اپنے ساتھیوں کو تنہا نہیں چھوڑوں گا اور ان کے خلاف انتقامی کارروائی بالکل بھی برداشت نہیں کروں گا۔ ان کا کہنا تھا کہ ان لوگوں کا یہ قصور ہے کہ انہوں نے حق اور سچ کا ساتھ دیا، ذوالفقار علی بھٹو کے لئے کوڑے کھائے، جیلیں کاٹیں اور بینظیر بھٹو کو اپنی ماں، بیٹی اور بہن سمجھ کر ان کا ساتھ دیا لیکن باہر سے مسلط ہونے والے آصف علی زرداری نے بے نظیر بھٹو کی پارٹی کو تباہ و برباد کرکے رکھ دیا ہے، آصف علی زرداری کی پیسوں کی حوس ابھی ختم نہیں ہوئی ہے۔ دوسری جانب واقعہ کیخلاف مقامی تاجر کی مدعیت میں ماڈل پولیس اسٹیشن میں ہی ذوالفقارمرزا اور 20 ساتھیوں کے خلاف مقدمہ درج کرلیا گیا جس میں ہنگامہ آرائی، توڑ پھوڑ اور اقدام قتل کی دفعات شامل ہیں۔

مزید :

صفحہ اول -