مے ویدر ’’ایک ہاتھ‘‘ والے حریف پر مکے برساتے رہے

مے ویدر ’’ایک ہاتھ‘‘ والے حریف پر مکے برساتے رہے
مے ویدر ’’ایک ہاتھ‘‘ والے حریف پر مکے برساتے رہے

  

لاس ویگاس (ویب ڈیسک) صدی کی سب سے بڑی لڑائی کے دوران ا مریکی باکسر فلائیڈ مے ویدر ایک ہاتھ و الے حریف پر مکے برساتے رہے۔ اس بات کا انکشاف فلپائنی باکسر مینی پیکیو نے مقابلے کے بعد پریس کانفرنس میں کیا۔ انہوں نے بتایا کہ ان کا دایاں کندھا تین ہفتے قبل ٹریننگ کے دوران زخمی ہوگیا تھا جس کی وجہ سے وہ فائٹ سے دستبرداری پر غور کررہے تھے۔ انہوں نے کہا اس سلسلے میں نواڈا کے سٹیٹ ایتھلیٹکس کمیشن کو بھی مطلع کیا گیاتھا۔ انہوں نے کہا میں نے اس سلسلے میں کمیشن سے دردکش انجکشن کی بھی درخواست کی تھی تاہم اسے کمیشن نے رد کردیا۔ دوسری جانب کمیشن کا کہنا ہے کہ عین لڑائی سے قبل انجکشن طلب کیا گیا تھا جس پر انکار کیا گیا۔ پیکیو نے بتایا کہ تیسرے راؤنڈ میں مجھے درد شروع ہوگیا تھا جس کے بعد میں اپنے دائیں ہاتھ کو ٹھیک طرح استعمال نہیں کرپایا۔

مزید :

کھیل -