پولیس گرفتاری ، سیکیورٹی خدشات پر ذوالفقار مرزا نے ایک مرتبہ سندھ ہائیکورٹ سے رجوع کرلیا

پولیس گرفتاری ، سیکیورٹی خدشات پر ذوالفقار مرزا نے ایک مرتبہ سندھ ہائیکورٹ ...
پولیس گرفتاری ، سیکیورٹی خدشات پر ذوالفقار مرزا نے ایک مرتبہ سندھ ہائیکورٹ سے رجوع کرلیا

  

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) سابق صوبائی وزیرداخلہ ذوالفقار مرزا نے پولیس کی گرفتاری اور سیکیورٹی خدشات پر ایک مرتبہ پھر سندھ ہائیکورٹ سے رجوع کرلیاہے اور موقف اپنایاکہ جعلی پولیس مقابلے میں مارے جانے کا خدشہ ہے ۔

وکیل کی وساطت سے دائر درخواست میں ذوالفقار مرزا کاکہناتھاکہ ایس ایس ملیر کو خصوصی ٹاسک دے کر بدین تعینات کردیاگیاہے اور اُن کی آمد سے پہلے ہی بے بنیادمقدمات بنادیئے گئے ہیں اورسندھ حکومت اور اعلیٰ سیاسی شخصیات کے خلاف بیان دینے کی وجہ سے اُنہیں جعلی پولیس مقابلے میں مارے جانے کا خدشہ ہے جس پر عدالت جانی تحفظ یقینی بنانے کا حکم دے اور ضمانت قبل ازگرفتاری منظور کی جائے ۔

یادرہے کہ بدین کے ماڈل پولیس سٹیشن میں ڈی ایس پی کی طرف بات نہ سننے پر ذوالفقار مرزا نے اُن کی ٹیبل پر مکا مار کر شیشہ توڑ دیاتھااورپولیس افسر کو موبائل فون باہر پھینک دیا جبکہ اپنی سیٹ سے اٹھنے پر ذوالفقار مرزا کے ساتھیوں نے ڈی ایس پی کو روک کر اپنی نشست پر واپس بٹھادیاتھاجس کے بعد ذوالفقار مرزا پر مزید مقدمات بنادیئے گئے جبکہ ایم کیوایم کیخلاف ”دھماکہ“ کرنیوالے ایس ایس پی کو بدین تعینات کردیاگیا۔

مزید :

کراچی -