پنجاب کابینہ، کھال پنچائیت ایکٹ منظور، گندم خریداری مہم اوپن کرنیکا فیصلہ 

پنجاب کابینہ، کھال پنچائیت ایکٹ منظور، گندم خریداری مہم اوپن کرنیکا فیصلہ 

  



لاہور(سٹی رپورٹر)وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کی زیرصدارت صوبائی کابینہ کا اجلاس منعقد ہوا، اجلاس میں وزیراعظم نیا پاکستان ہاؤسنگ پروگرام کیلئے پنجاب ہاؤسنگ اینڈ ٹاؤن پلاننگ ایجنسی کیلئے 5 ارب روپے کے فنڈز جاری کرنے کی منظوری دی گئی۔اجلاس میں لاہور اور راولپنڈی،اسلام آباد میٹرو بس سروس کے کرایوں پر نظرثانی کی تجویز موخرکردی گئی۔اجلاس میں پنجاب اریگیشن اینڈ ڈرینج اتھارٹی (پیڈا) ایکٹ 1997ء ختم کرنے کا فیصلہ کیاگیااور پنجاب اریگیشن اینڈ ڈرینج اتھارٹی (پیڈا) ایکٹ کی جگہ کھال پنچائیت اتھارٹی کے قیام کا فیصلہ کیا گیا- کابینہ نے کھال پنچائیت ایکٹ 2019ء کی منظوری دی-کھال پنجائیت کسانوں پر مشتمل ہو گی- اجلاس میں گندم خریداری مہم اوپن کرنے کا فیصلہ کیا گیا-پنجاب حکومت ہر اس کسان سے گندم خریدے گی جو اپنی گندم خریداری مرکز پر لائے گا اور اس ضمن میں کاشتکاروں کی آسانی کیلئے سابقہ طریقہ کار میں بھی ردوبدل کیا گیا ہے -وزیر اعلی عثمان بزدار نے کہا کہ گندم خریداری مہم میں کاشتکاروں سے دانہ دانہ خریدا جائے گا اور خریداری مرکز پر کاشتکاروں کو ہر طرح کی سہولت دیں گے - کاشتکاروں کے حقوق کا پورا تحفظ کریں اور انہیں ان کی محنت کا مکمل معاوضہ ملے گا - اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ ژالہ باری اور بارشوں سے متاثرہ علاقوں کے کسانوں کیلئے امدادی پیکیج دیا جائے گا-وزیر اعلی نے اس ضمن میں سینئر ممبر بورڈ آف ریونیو کو ہدایت کی کہ متاثرہ کاشتکاروں کیلئے  امدادی پیکیج کو جلد حتمی شکل دی جائے -کابینہ کے اجلاس میں لاہور میں پولیو کیس سامنے آنے پر گہری تشویش کا اظہارکیا گیا اور انسداد پولیو کیلئے جنگی بنیادوں پر اقدامات اٹھانے کا فیصلہ کیاگیا-وزیر اعلی نے انسداد پولیو کے لئے جامع حکمت عملی مرتب کرنے کی ہدایت کی اور کہا کہ اس ضمن میں تمام متعلقہ اداروں کو مل کر انسداد پولیو کیلئے کاوشیں کرنا ہوں گی - وزیر اعلی نے کہا کہ محکمہ صحت انسداد پولیو کیلئے ہنگامی بنیادوں پر اقدامات کرے -یہ وقت ایمرجنسی کا ہے لہذاانسداد پولیو کیلئے ہنگامی اقدامات اٹھائے جائیں - وزیر اعلی نے اس ضمن میں دو روز میں جامع پلان طلب کر لیا- اجلاس میں دی پولیس ایوارڈ آف کمپنسیشن (Award of Compensation) رولز 1989 کے رول 12 (اے) اور 12 (بی) میں ترمیم کی منظوری دی گئی۔اس ترمیم سے پولیس شہداء کے خاندانوں کو مزید سہولتیں مہیا کی جائیں گی جبکہ فیملی کلیم پالیسی میں ترمیم کی بھی منظوری دی گئی۔ اجلاس میں محکمہ خوراک کی طرف سے ضمنی بجٹ گرانٹس برائے مالی سال 2018-19 کی ڈیمانڈز کی منظوری دی گئی۔اجلاس میں ڈیرہ غازی خان میں ویسٹ مینجمنٹ کمپنی کے قیام کا فیصلہ کیا گیا اورکابینہ نے ویسٹ مینجمنٹ کمپنی کے قیام کی منظوری دی۔ اجلاس میں وقف پراپرٹیز ایڈمنسٹریشن رولز 2002 میں ترمیم،ہائیڈروکاربن سی پیجز  (Hydrocarbon Seepages)کی ڈویلپمنٹ کیلئے گائیڈ لائنز کے مسودے اورسنٹینسنگ لاء (Sentencing Law) کے مسودے کی منظوری دی گئی۔ صوبائی کابینہ کے 8 ویں اور 9 ویں اجلاس کے منٹس کی توثیق کی گئی جبکہ کابینہ کی سٹینڈنگ کمیٹی برائے فنانس اینڈ ڈویلپمنٹ کے 7 ویں اور 8 ویں اجلاس کے فیصلوں کی توثیق کی گئی۔صوبائی وزراء، مشیران، معاونین خصوصی، چیف سیکرٹری اور متعلقہ حکام نے اجلاس میں شرکت کی۔دوسری طرف وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے فائر فائٹرز کے عالمی دن کے موقع پر اپنے پیغام میں کہا ہے کہ فائر فائٹرز اپنی جان خطرے میں ڈال کر آتشزدگی میں گھرے افراد کی حفاظت کا فریضہ سرانجام دیتے ہیں اور آتشزدگی کے واقعات میں جان و مال کے نقصان کے تناسب کو کم کرنے کیلئے فائر فائٹرز کا کرداراہم ہے۔ انہوں نے کہا کہ حادثات سے موثر طور پر نمٹنے کیلئے جدید تقاضوں کے مطابق فائر فائٹرز کی تربیت وقت کا تقاضا ہے کیونکہ فائر فائٹرز کی پیشہ ورانہ تربیت ناگہانی حادثات کے نقصانات کوکم کر دیتی ہے اور یہی وجہ ہے کہ فائر فائٹرز کی تربیت کو بہتر بنانے اور پیشہ ورانہ امور کی انجام دہی کیلئے ہر ممکن وسائل فراہم کئے جا رہے ہیں۔

پنجاب کابینہ 

مزید : صفحہ اول


loading...