سٹاک ایکسچینج میں پھر مندی،سرمایہ کاروں کے80ار ب ڈوب گئے

سٹاک ایکسچینج میں پھر مندی،سرمایہ کاروں کے80ار ب ڈوب گئے

  



کراچی (این این آئی)پاکستان سٹاک ایکسچینج میں مندی شدت اختیار کرگئی،کاروباری ہفتے کے آخری روز سرمایہ کاروں کی جانب سے مارکیٹ سے سرمایہ نکالنے کے رجحان کے باعث کے ایس ای100انڈیکس مزید 424.68پوائنٹس کی کمی سے36122.95پوائنٹس کی سطح پر آگیا جب کہ67.49فیصد حصص کی قیمتوں میں کمی ریکارڈ کی گئی جس سے سرمایہ کاروں کو80ارب37کروڑ8لاکھ روپے سے زائد کا نقصان اٹھانا پڑا۔اورکاروباری حجم بھی صرف 6کروڑ43لاکھ35ہزار شیئرز تک محدود رہا۔گزشتہ روز ٹریڈنگ کا آغاز منفی زون میں ہوا اور ملکی زرمبادلہ کے ذخائر میں کمی آنے،بجٹ میں متوقع طور پر ٹیکسوں میں اضافہ اور آئی ایم ایف سے جاری مزاکرات کی غیرو اضح صورتحال کے باعث سرمایہ کاروں کی جانب سے نئی سرمایہ کاری کے بجائے مارکیٹ سے سرمایہ نکالنے کا رجحان دیکھنے میں آیا جس کے باعث ٹریڈنگ کے ابتداء سے ہی مارکیٹ مندی کی لپیٹ میں آگئی اور ٹریڈنگ کے دوران ایک موقع پر کے ایس ای100انڈیکس36076پوائنٹس کی نچلی سطح پر آگیا لیکن 36ہزار کی نفسیاتی حد کے قریب پہنچنے پر ریکوری آئی لیکن مجموعی طور پر حصص مارکیٹ منفی اثرات سے نہ نکل سکی اورمارکیٹ کے اختتام پر کے ایس ای100انڈیکس 424.68پوائنٹس کی کمی سے36122.95پوائنٹس پر بندہوا۔اسی طرح کے ایس ای30انڈیکس240.94پوائنٹس کمی سے17077.47پوائنٹس،کے ایم آئی30انڈیکس971.02پوائنٹس کمی سے57879.78پوائنٹس جبکہ کے ایس ای آل شیئرز انڈیکس289.34پوائنٹس کمی سے26537.79پوائنٹس پربندہوا۔ گزشتہ روزمجموعی طور پر218کمپنیوں کے حصص کا کاروبار ہوا،جن میں سے88کمپنیوں کے حصص کے بھاؤمیں اضافہ ہواجب کہ اسکے مقابلے میں 218کمپنیوں کے حصص کے بھاؤ میں کمی جبکہ17کمپنیوں کے حصص کے بھاؤ میں استحکام رہا۔مندی کے باعث سرمایہ کاری مالیت میں 80ارب37کروڑ8لاکھ روپے کی کمی ریکارڈ کی گئی جس کے نتیجے میں سرمایہ کاری کی مجموعی مالیت گھٹ کر73کھرب71 ارب61 کروڑ84لاکھ روپے ہوگئی۔

سٹاک ایکسچینج

مزید : صفحہ اول


loading...