پہلی پیشی پرڈاکٹر منور غائب، سی ای او ہیلتھ دوبارہ طلب

پہلی پیشی پرڈاکٹر منور غائب، سی ای او ہیلتھ دوبارہ طلب

  



ملتان ( وقائع نگار) چیف ایگزیکٹیو آفیسر ڈسٹرکٹ اتھارٹی ہیلتھ ڈاکٹر منور عباس کا اپنے خلاف شروع ہونے والی انکوائری کیلئے افسر کے سامنے پیش نہ ہونے کا انکشاف ہوا ہے۔جس پر انکوائری افسر ڈاکٹر ہیلتھ سروسز ملتان ڈویڑن ڈائریکٹر شاہد محمود بخاری نے ایک بار پھر دوبارہ سی ای او ہیلتھ کو طلب کرلیا ہے۔جو اپنے بیان دیں گے۔ جبکہ دوسری جانب کڈنی سنٹر کے متاثرہ ملازمین نے بطور (بقیہ نمبر34صفحہ12پر)

18 لاکھ روپے ڈاکٹر منور عباس کو کو رشوت دینے بارے اپنے بیانات انکوائری افسر کو قلم بندکروا دیے ہیں۔باوثوق ذرائع نے اس بات کا بھی انکشاف کیا ہے کہ سی ای او ہیلتھ ڈاکٹر منور عباس اپنے آپ کو بچانے کے لیے ہر قسم کا حربہ استعمال کرنے کی کوشش میں ہیں۔اور بوکھلاہٹ کا شکار ہے۔متاثرہ کڈنی سنٹر ملازمین کا کہنا ہے۔جب تک ہم کو انصاف نہیں مل جاتا۔تب تک حصول انصاف کیلئے ہر اعلی حکام کا دروازہ کھٹکھٹائے گے۔بصورت دیگر سٹرکوں پر نکل کر احتجاج کرینگے۔ملازمین کا مزید یہ کہنا ہے کہ مذکورہ سی ای او ہیلتھ کے ظلم سے ہمیں بچایا جائے۔

ڈاکٹر منور

مزید : ملتان صفحہ آخر