افغانستان، صوبہ بغلا ن اورغذنی میں جھڑپیں، 42طالبان، 7سکیورٹی اہلکارہلاک 

افغانستان، صوبہ بغلا ن اورغذنی میں جھڑپیں، 42طالبان، 7سکیورٹی اہلکارہلاک 

  



پل خمری(آئی این پی/شِنہوا)افغانستان کے مختلف علاقوں میں سکیورٹی فورسز اور طالبان کے درمیان جھڑپوں میں 42طالبان،7سکیورٹی اہلکار ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے۔تفصیلات (بقیہ نمبر13صفحہ12پر)

کے مطابق طالبان کے ایک گروپ نے شمالی افغانستان کے ایک صوبے بغلان کا ضلع برکہ واپس لینیکیلئے  سیکیورٹی فورسز پر حملہ کردیا۔جس سے سیکیورٹی فورسز اور انتہاپسندوں میں فائرنگ کا تبادلہ ہوا۔ کافی دیر لڑائی کے نتیجے میں کم ازکم تیس طالبان اور 7 سیکیورٹی اہلکار ہلاک ہو گئے، جبکہ دس طالبان اور 12سیکیورٹی اہلکار زخمی ہوگئے۔ترجمان صوبائی حکومت محمود حقمل نے ان کاروائیوں کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا ہے کہ علاقے میں اپریشن کلین اپ بدستور جاری ہے۔صوبائی کونسل کے ایک رکن بسم اللہ عطاش نے سیکیورٹی اہلکاروں کے ہلاک اور زخمی ہونے کی تصدیق کی ہے۔دریں اثناء  افغانستان کے مشرقی صوبے غزنی کے علاقے میں طالبان اور سرکاری فورسز کے درمیان لڑائی میں 12طالبان ہلاک ہوگئے سیکیورٹی فورسز غزنی شہر سے باہر کے علاقے میں آپریشن کررہی تھی کہ طالبان نے جوابی کاروائی کی جس پر کافی دیر فائرنگ کے تبادلے میں طالبان 12لاشیں چھوڑکرچلے گئے۔ترجمان صوبائی حکومت عارف نوری نے واقع کی تصدیق کی ہے۔

افغانستان

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...