نوشہرہ پولیس میں اندھیرنگری، بے گنا ہ کم عمر لڑکے کیخلاف ایف آئی آ ر درج 

نوشہرہ پولیس میں اندھیرنگری، بے گنا ہ کم عمر لڑکے کیخلاف ایف آئی آ ر درج 

  



نوشہرہ(بیورورپورٹ) اضاخیل پولیس نے کم عمر لڑکے کو بے گناہ گرفتار کرکے ان کے خلاف من گھڑت ایف آئی آر درج کردی متاثرہ لڑکے کا والد فریاد لے کر نوشہرہ پریس کلب پہنچ گیا آئی جی خیبرپختونخوا، ڈی آئی جی مردان ریجن اور ڈی پی او نوشہرہ سے اصلاح واحوال کا مطالبہ تفصیلات کے مطابق رامداد خان سکنہ امان گڑھ ضلع نوشہرہ نے بتایا کہ میرا کم عمربیٹا شاہ روم جن کی عمر14 سال ہے جو کہ عدالتی پیش کے بعد رکشے میں اپنے گھر واقعے امان گڑھ جارہا تھا کہ راستے میں اضاخیل پولیس کے موبائل انچارج اے ایس آئی باز محمد نے رکشے کوروک کر میرے بیٹے کو اتار دیا اور زبردستی موبائل میں بیٹھاکر تھانے لے جاکر تھانے میں ان کے خلاف چرس میں پرچہ درج کیاگیا جو کہ سراسر ظلم وزیادتی ہے انہوں نے کہا کہ کئی گھنٹے اپنے بیٹے کو تلاش کرتا رہا لیکن اس کا کچھ اتا پتہ نہیں تھا لیکن تقریباً 8 گھنٹے بعد کسی نے اطلاع دی کہ آپ کا بیٹا شاہ روم تھانہ اضاخیل میں چرس کے جرم میں گرفتار ہے انہوں نے آئی جی خیبرپختونخوا، ڈی آئی جی مردان اور ڈی پی او نوشہرہ سے داد رسی کا مطالبہ کیا ہے۔ 

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...