جامعہ پشاور میں متحدہ طلباء کا مطالبات کے حل کیلئے 2دن کا کامیاب دھرنا 

جامعہ پشاور میں متحدہ طلباء کا مطالبات کے حل کیلئے 2دن کا کامیاب دھرنا 

  



پشاور (سٹی رپورٹر) جامعہ پشاور میں متحدہ طلبہ محاذ نے حکومت کی جانب سے تعلیمی بجٹ میں کٹوتی،سکالرشپس کے خاتمہ اور طلبہ تشدد کے لئے صوبائی حکومت کے پارلیمانی کمیٹی کی سفارشات پر عدم عمل درآمد کے خلاف دو دن کا کامیاب دھرنا۔ طلبہ کے زبردست احتجاج کے پیش نظر گورنر نے اپنا دورہ جامعہ پشاور منسوخ کیا۔ بعد ازاں سیکرٹری سائیر ایجوکیشن منظور احمد طلبہ سے مذاکرات کے آئیں اور طویل مذاکرات کے بعد پندرہ دن کے اندر واقعہ میں ملوث افسران جن میں پروسٹ سیف اللہ، چیف سیکیورٹی آفیسر کرنل (ر) عزیز گل، ہاسٹل سیکیورٹی انچارج ثقلین بنگش، اسسٹنٹ پروسٹ شیراز کو عہدوں سے برطرف کرنے کی یقین دہانی کرائی جس پر متحدہ طلبہ محاذ نے کچھ دنوں کے لئے اپنا دھرنا ملتوی کردیا ۔ یاد رہے کہ ہائیر ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ  کی جانب سے وائس چانسلر  جامعہ پشاور کو ان بالا افسران کو ہٹانے اور صوبائی پارلیمانی کمیٹی کی سفارشات پر عمل درآمد بنانے کے لئے  نوٹیفیکیشن جاری کئے گئے ہیں لیکن وائس چانسلر جامعہ پشاور ان افسران کو ہٹانے اور سفارشات پر عمل درآمد کو یقینی بنانے میں لیت و لعل سے کام لے رہے ہیں 

مزید : پشاورصفحہ آخر