دینی مدارس کیخلا ف یہودی لابی کی کوششیں کامیاب نہیں ہونے دیں گے: علامہ محمد صدیق 

دینی مدارس کیخلا ف یہودی لابی کی کوششیں کامیاب نہیں ہونے دیں گے: علامہ محمد ...

  



مٹہ ( نمائندہ پاکستان)جمعیت علماء اسلام کے صوبائی رہنماء اور مذہبی سکالر علامہ محمد صدیق اور شیخ الحدیث مہتمم مولانا حافظ الرحمان نے کہا ہے کہ دینی مدارس کی خلاف یہودی لابی کی کوئی بھی کوشش کو کامیاب نہیں ہونے دینگے دینی مدارس کی تحفظ کیلئے ہر پاکستانی قربانی دینے کیلئے تیار ہے دینی مدارس دین کی چشمے ہیں اور یہ چشمے تاقیامت دین کی سربلندی کیلئے کام کرینگے حکومت کی اربوں روپے تعلیم پر خرچ کرنے کی باوجود طلباء تعلیم  کیلئے بیرونی ملک جانے پر مجبور ہے جبکہ بغیر کسی فنڈز کی چلنے والی مدارس میں دینی تعلیم حاصل کرنے کیلئے بیرونی ممالک طلباء پاکستان اتے ہیں  جو حکومت کی مدرسوں کی خلاف بے بنیاد اور من گھڑت پروپیگنڈوں کیلئے منہ بولتا ثبوت ہیں انہوں نے کہا کہ پاکستان میں پہلے بھی کھبی یہودی لابی اور انکے ایجنٹوں کی  پالیسیاں کامیاب ہوئی ہیں اور نہ ائندہ ہوگی ان خیالات کااظہار انہوں نے گذشتہ روز دارلعلوم مٹہ میں تحفظ دینی مدارس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا تقریب سے مولانا حافظ محمد ادریس مولانا علی رحمان سواتی مولانا حاجی فہیم اور دیگر علماء کرام نے بھی خطاب کی کانفرنس میں بڑی تعداد میں لوگوں نے شرکت کی مقررین نے کہا کہ دین کی سربلندی میں اس وقت دینی مدارس کی ایک اہم کردار ہے اور کسی بھی صورت پر حکومت کی طرف سے ان مدارس پر کسی انچ کو انے نہیں دینگے انہوں نے کہا کہ یہ پہلی بار نہیں ہورہا کہ دینی مدارس کی خلاف باتیں ہورہی ہے بلکے اس سے پہلے بھی یہودی لابی کو خوش کرنے کیلئے موجودہ حکومت سے پہلے بھی لوگوں نے اس طرح پروپیگنڈے کی ہے لیکن پہلے بھی جمعیت علماء اسلام اور دینی مدارس کی قائدین نے ان مذموم کوششوں کو ناکام بنادی ہے اور انشاء اللہ اس بار بھی ان لوگوں کو ناکامی کی سواء کچھ نہیں ملی گی انہوں نے کہا کہ دینی مدارس پر قدغن لگانا دین پر قدغن لگانے کی برابر بات ہے انہوں نے کہا کہ اس وقت موجودہ حکومت نے دینی مدارس کیساتھ ساتھ علماء کرام کی داڑھی اور تہذیب کو بدنام کرنے اور لینے کی کوشش شروع کی ہے اور یہی وجہ ہے کہ اج ہرداڑھی والے کو بیرونی دنیا میں شک کی نظر سے دیکھی جاتی ہے لیکن انشاء اللہ ہم ایسے نہیں ہونے دینگے  انہوں نے کہا کہ مدارس پر بات کرنے سے پہلے بھی حکومت نے تعلیمی انصاب میں بڑی پیمانے پر یہودی لابی کو خوش کرنے کیلئے تبدیلیاں کی گئی ہے لیکن اب حکومت کو لگام لگانے کا موقع ہے انہوں نے کہا کہ عوام موجودہ حکومت کے اسلام دشمن اور مسلمان دشمن پالیسیوں کی خلاف دینی مدارس اور جمعیت علماء اسلام کا ساتھ دیکر اپنی دینی ذمہ داری پوری کریں کانفرنس کی اخر میں ایک خصوصی دعا بھی کی گئی

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...