عدالت کا دارالصحت ہسپتال کھولنے کا حکم

عدالت کا دارالصحت ہسپتال کھولنے کا حکم
عدالت کا دارالصحت ہسپتال کھولنے کا حکم

  



کراچی(ویب ڈیسک) سندھ ہائی کورٹ نے نشوہ بچی کی ہلاکت کے بعد دارالصحت ہسپتال کو سیل کرنے کا نوٹی فکیشن معطل کرتے ہوئے ہسپتال کھولنے کا حکم دے دیا۔

ایکسپریس کے مطابق عدالت نے سندھ حکومت کے وکیل ایڈووکیٹ جنرل سلمان طالب الدین کو نوٹس جاری کرتے ہوئے حکم دیا ہے کہ بتایا جائے کہ ہسپتال کیوں بند کیا؟قبل ازیں درخواست گزار اسپتال انتظامیہ نے صلاح الدین ایڈووکیٹ کے توسط سے دائر درخواست میں سندھ حکومت کے چیف سیکریٹری ، سیکریٹری صحت سندھ اور سندھ ہیلتھ کیئر کمیشن کو فریق بناتے ہوئے موقف اختیار کیا کہ کمیشن نے 24 مئی 2019ء کو ازخود کارروائی کرتے ہوئے دارالصحت ہسپتال کو بند کردیا تھا جبکہ مذکورہ کمیشن کو ازخود کارروائی کرکے کسی ہسپتال کو بند کرنے کا کوئی اختیارنہیں کیونکہ اس عمل کے لیے مجاز اتھارٹی سیکریٹری صحت کی جانب سے تحریری حکم نامہ جاری ہونا لازمی ہے۔

درخواست میں مزید کہا گیا تھا کہ کمیشن نے محض زبانی کلامی بیان کے بعد مذکورہ اسپتال کو سربمہر کردیا جس کی وجہ سے ہسپتال میں زیر علاج مریضوں کو نہ صرف سخت اذیت کا سامنا کرنا پڑا بلکہ اسپتال کی ساکھ بھی بری طرح سے متاثر ہوئی لہذا عدالت عالیہ سے استدعا ہے کہ دار الصحت ہسپتال کو فوری طورپر کھولا جائے اور سندھ حکومت سمیت متعلقہ حکام سے جواب طلب کیا جائے۔

مزید : علاقائی /سندھ /کراچی


loading...