’اگر بیوی بد صورت ہو تو مرد قربت سے پہلے نشہ کرسکتا ہے‘ متنازعہ ترین فتوے نے ہنگامہ برپا کردیا

’اگر بیوی بد صورت ہو تو مرد قربت سے پہلے نشہ کرسکتا ہے‘ متنازعہ ترین فتوے نے ...
’اگر بیوی بد صورت ہو تو مرد قربت سے پہلے نشہ کرسکتا ہے‘ متنازعہ ترین فتوے نے ہنگامہ برپا کردیا

  



رباط(مانیٹرنگ ڈیسک) کون نہیں جانتا کہ اسلام نے شراب اور دیگر منشیات کو حرام قرار رکھا ہے اور یہ کسی طور حلال قرار نہیں پا سکتیں لیکن اب شمالی افریقہ کے ملک مراکش کے ایک امام نے اس حوالے سے ایک حیران کن اور مضحکہ خیز فتویٰ جاری کر دیا ہے۔ ویب سائٹ ’مینگوباز‘ کے مطابق فتوے میں امام نے کہا ہے کہ ”جن مردوں کی بیویاں ’بدقسمتی سے‘ بدشکل ہیں وہ ان کے پاس جانے سے قبل منشیات استعمال کر سکتے ہیں تاکہ انہیں ان کی بیویاں خوبصورت لگیں۔

رپورٹ کے مطابق امام صاحب نے فتوے میں کہا ہے کہ ”ایسے مرد جن کی بدقسمتی سے بدصورت عورتوں سے شادی ہوجاتی ہے ان کے لیے منشیات کا استعمال آئیڈیل ہے۔ اس طرح ان کی بدصورت بیویاں بھی انہیں حوروں جیسی خوبصورت لگنے لگیں گی۔“ تاہم اس فتوے میں امام صاحب نے اتنی رعایت ضرور کی کہ عمر کی حد مقرر کر دی۔ انہوں نے لکھا کہ ”40سال سے کم عمر مرد ہی بدصورت بیوی کے پاس جانے سے قبل منشیات استعمال کر سکتے ہیں اور یہ ان کے لیے فائدہ مند ہو سکتی ہیں۔بڑی عمر کے لوگوں کے لیے یہ درست نہیں۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...