کورونا وائرس، معاشی پیکیج سے فائدہ اٹھانے کیلئے سرکاری محکموں کو مربوط حکمت عملی پر عمل کرنا ہو گا: حفیظ شیخ

کورونا وائرس، معاشی پیکیج سے فائدہ اٹھانے کیلئے سرکاری محکموں کو مربوط حکمت ...

  

اسلام آباد (این این آئی)مشیر خزانہ ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ نے کہا ہے کہ کورونا وباء سے معیشت کو بچانے کیلئے دیئے جانے والے پیکیج سے فائدہ اٹھانے کیلئے مختلف سرکاری محکموں کو مربوط حکمت عملی پر عمل کرنا ہو گا۔ اتوار کو مشیر خزانہ ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ کی زیر صدارت کورونا وباء کے معیشت پر منفی اثرات کا جائزہ لینے کے حوالے سے وزیر اعظم کے تشکیل کردہ تھنک ٹینک کا اجلاس اسلام آباد میں میں ہوا۔اجلاس میں وبا کے افرادی اور کاروبار پر پڑنے والے اثرات، طلب و رسد، حکومت کی جانب سے اٹھائے گئے اقدامات اورترجیحی شعبہ جات پر تبادلہ خیال کیا گیا۔مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ نے واضح روڈ میپ پر مبنی اہداف کے حصول کی ضرورت پر زوردیا۔اجلاس میں چھ ترجیحی شعبوں کا انتخاب کیا گیا جن میں سماجی تحفظ، غذائی تحفظ، سپلائی چین کے تحفظ، بنکوں کے کردار میں اضافے، کم لاگت گھرانوں کی تعمیر کے منصوبوں کے آغاز، سرکاری شعبے کے ترقیاتی پروگرام کو مزدورں کیلئے مزید موثر بنانے اور کاروبار کو سہولت شامل ہے۔اجلاس میں بارہ سو چالیس ارب روپے کے وزیر اعظم کے اقتصادی پیکج سے زیادہ سے زیادہ فائدہ حاصل کرنے کیلئے پیکج پر عمل درآمد کا باقاعدگی سے جائزہ لینے کا فیصلہ کیا گیا۔اجلاس میں سیلز ٹیکس کے نرخ، ریفنڈ، مالیاتی شعبے کے متعلق سفارشات، بنکوں کو دی جانے والی مراعات اور ترسیلات زرمیں اضافے کیلئے کئے جانے والے اقدامات پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔مشیر خزانہ حفیظ شیخ نے کہا کہ وزارت خزانہ تھنک ٹینک معاشی بحالی کے لیے شارٹ ٹرم تجاویز پیش کرے، مانیٹری اور معاشی پالیسیوں کے لیے دنیا کے تجربات سے سیکھا جائے۔حفیظ شیخ نے کہا کہ چھ شعبوں سے متعلق تجاویز کو متعلقہ وزارتوں کو پیش کیا جائے گا۔وزارت خزانہ فورم نے بینکس اور مالیاتی اداروں سے متعلق بھی تجاویز دیں جبکہ سیلز ٹیکس میں تبدیلی کی سفارشات ایف بی آر کے سامنے رکھنے کا فیصلہ کیا گیا۔اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ ٹیکس تجاویز کو آئندہ بجٹ کا حصہ بنانے کی کوشش کی جائے گی۔

حفیظ شیخ

مزید :

صفحہ اول -