لنڈی کوتل میں پھنسے ہوئے سینکڑوں افغانیوں کا پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہر ہ

  لنڈی کوتل میں پھنسے ہوئے سینکڑوں افغانیوں کا پریس کلب کے سامنے احتجاجی ...

  

خیبر (عمران شینواری)لنڈیکوتل میں پھنسے ہوئے سینکڑوں افغانیوں کا پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا،مظاہری نے بارڈر کھولنے کے نعرے لگا ئیں اور اعلی حکام سے بارڈر کھولنے پر زور دیا،مظاہرین کے مطابق کہ گزشتہ کئی دنوں سے پاکستان کے مختلف علاقوں سے ہزاروں کی تعدادمیں افغانی شہری لنڈی کوتل آئے ہوئے ہیں اور یہاں پر فوٹھ پاتھوں پر اور بازار میں خالی مارکیٹوں اور مسجدوں میں رہائش اختیا رکی ہے جبکہ زیا دہ تر طورخم روڈ پر ریلوے ٹنل میں رہائش اختیار کرکے بارڈر کھولنے کی انتظار میں دن رات گزارتے ہیں افغان مظاہرین نے میڈیا نمائندگا ن کو بتا یا کہ انکے ساتھ درجنوں خواتین اور بچے بھی ہیں جو کھلے آسمان تلے انتظار میں بیٹھے ہوئے ہیں انہوں نے کہا کہ یہاں کے مقامی لوگوں نے کھانا پینا مہیا کر تے ہیں لیکن ہزاروں کی تعدا د میں لوگوں کو افطاری دینا اور سحری دینا سخت مشکل ہیں لیکن وہ مقامی لوگوں کے شکر گزار ہیں کیونکہ مقامی لوگوں نے بازار کے خالی مارکیٹ کھلوا کر دوکانوں میں رہنے کیلئے جگہ دیا افغان مطاہرین نے کہا کہ انکے پاس خرچے ختم ہو گئے ہیں لنڈیکوتل بازار میں مجبوری کی وجہ سے اپنے موبائل فونز بھیج دیئے ہیں لیکن پھر بھی خرچے پورے نہیں ہو تے دونوں ملکوں کے اعلی حکام سے اپیل کرتے ہیں کہ مزید انکو رسواء اور ذلیل نہ کریں کیونکہ انکے پاس خواتین اور بچے بھی ہیں بارڈر کھول دیں تاکہ وہ اپنے وطن جا سکیں انہوں نے کہا کہ کئی دنوں سے لنڈیکوتل بازار کے فٹ پاتھوں اور مارکیٹوں،مسجدوں اور ٹنلز بے یا رومدر گار پڑے ہیں اس لئے احتجاج کرنے پر مجبور ہو گئے ہیں تاکہ نکا مسئلہ حل ہو سکے اور اپنے وطن واپس جا سکیں واضح رہے کہ لنڈیکوتل بازار میں سینکڑوں افغانی ایک ساتھ گھومتے پھرتے اور ساتھ رہنے سے کورونا وائرس پھیلنے کا خدشہ ہیں اس لئے اعلی حکام فوری نوٹس لے کر مسئلہ حل کریں

مزید :

پشاورصفحہ آخر -