ڈاکٹر اسفندیار قتل کیس کے 2 مرکزی ملزمان گرفتار

  ڈاکٹر اسفندیار قتل کیس کے 2 مرکزی ملزمان گرفتار

  

پشاور(سٹاف رپورٹر) کاٹلنگ پولیس نے ڈاکٹر اسفندیار قتل کیس کے دو مرکزی ملزمان کو گرفتار کر لیا، تیسرے شریک واردات ملزم کی گرفتار ی بھی جلد متوقع۔علاقہ تھانہ کاٹلنگ انزرگی میں مسجد کی تعمیر پر تکرار کے دوران ملزمان نے مقتول اور اس کے والد پر فائرنگ کی تھی۔تفصیلات کے مطابق مورخہ 27اپریل کو علاقہ تھانہ کاٹلنگ کی حدود میں مسجد کی تعمیر و تکرار پر تین ملزمان مشرف، علی زر عرف زرے اور حضرت علی ساکنان انزرگی کاٹلنگ نے ڈاکٹر اسفندیار اور اس کے والد تاج نبی پر بہ ارادہ قتل فائرنگ کی جس کے نتیجے میں مقتول اور اسکا والد شدید زخمی ہوگئے تھے جن کو MMCمردان منتقل کردیا گیا جہاں پر مقتول زخموں کی تاب نہ لاکر جان بحق ہوگیا، واقع کی رپورٹ مقتول کے والد کی مدعیت میں تھانہ کاٹلنگ میں درج کی گئی، اس واقع کا ڈی پی او مردان سجاد خان نے سختی سے نوٹس لے کر واقع میں ملوث ملزمان کی فوری گرفتاری کیلئے ڈی ایس پی کاٹلنگ قاضی عصمت اللہ کی سربراہی میں ایس ایچ او کاٹلنگ اور تفتیشی افسر پر مشتمل ٹیم تشکیل دی جنہوں نے جدید سائنسی خطوط اور پیشہ ورانہ حکمت عملی کے ذریعے کامیاب کارروائی کرتے ہوئے واردات میں نامز د دومرکزی ملزمان مشرف اور علی زر عرف زرے تک 72گھنٹوں کے دوران گرفتار کر کے آلہ قتل پستول 30بور بھی برآمد کر لیا جبکہ تیسرے شریک واردات ملزم کی گرفتار ی کیلئے پولیس کی کارروائیاں جاری ہیں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -